ترہگام میں کرفیونافذ، کپوارہ کے دیگر علاقوں میں لوگوں کی نقل کو حرکت پر قدغن

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾ حکام سرحدی ضلع کپوارہ کے ترہگام علاقے میں فوج کے ہاتھوں ایک نوجوان کی ہلاکت پر عوامی احتجاج روکنے کے لئے کرفیو نافذ کردیا ہے ، جبکہ کپوارہ کے دیگر حصوں میں سخت قدغن عائد کردی گئی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ 22سالہ خالد غفار ملک ، جو پیشے سے ایک دکاندار ہے ، کو کل شام فوج نے اس وقت گولی کا نشانہ بنادیا ، جب یہاں نوجوانوں نے مبینہ طور فورسز پر پتھرائو کیا۔خالد موقعے پر ی جاں بحق ہوا تھا۔ اس واقعہ کے خلاف عوامی حلقوں میں شدید غم کو غصہ پایا جارہا ہے۔ آج خالد کومقامی مزار شہدا میں سپرد خاک کیا گیا۔ اسکی نماز جنازہ میں ہزاروں لوگ شامل ہوئے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں