بھارت کیساتھ ٹریک ٹو سطح کی بات چیت بحال کنٹرول لائن پر بھارت کی اشتعال انگیزی /32عام شہری ہلاک:اسلام آباد

سرینگر/الفا نیوز سروس /بھارت کیساتھ ٹریک ٹو سطح کی بات چیت کی بحالی کا واضح اشارہ دیتے ہوئے پاکستان نے آج کہاکہ بھارت کیساتھ بات چیت کی بحالی کیلئے کئی سطحوںپر بات چیت جاری ہے تاہم کامیابی کے بعد ہی واضح اعلان کیا جاسکتا ہے ۔اس دوران پاکستان نے بھارت پر کشمیر میں نسل کشی کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ کنٹرول لائن پر بھارت کی اشتعال انگیزی کے باعث اب تک 32عام شہری مارے گئے ہیں ۔ ہفتہ وار پریس کانفرنس کے دوران پاکسان کے دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ ہندوپاک کے درمیان کئی سطحوں پر ٹریک ٹو سطح کی بات چیت کی بحالی کیلئے کام ہورہا ہے اور ایسے میں جب ہم کامیاب ہوجائیں گے تو کھلے عام مذاکرات کی بحالی کا اعلان کیا جائیگا تاہم انہوںنے کہاکہ اعلانیہ طور پر کوئی چینل بحال نہیں کی گئی ہے ۔انہوںنے کہاکہ پاکستان بھارت سے بات چیت کے خلاف نہیں ہے ۔انہوںنے کہاکہ پاکستان کے پاس جو اطلاعات پہنچ رہی ہیں ان کے مطابق بھارتی فوج کشمیر میں نسل کشی کر رہی ہے اور ایسے میںحریت لیڈران کو گرفتار کرکے تہاڑ جیل بھیجا جارہا ہے جبکہ لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے جس کے سبب پچھلے ایک ہفتے کے اندر چودہ کے قریب افراد کو مارا گیا ہے اور نہتے لوگوں کو گولیوں سے بھون دیاجارہا ہے جبکہ حریت لیڈرانکو بھی طرح طرح سے ستایا جارہا ہے ۔انہوںنے بھارت پر ورکنگ باونڈ ی اور کنٹرول لائن دونوں میں اشتعال انگیزی کا الزام عائد کیا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ بھارت ناصرف کشمیر بلکہ لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر بھی سیز فائر معاہدوں کی خلاف ورزیاں کررہا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں