وزیراعظم کی طرف سے ترقیاتی پروجیکٹوں کا افتتاح

وزیراعظم نریندر مودی کل ریاست کے مختصر دورے پر آئے۔ اس دورے کے دوران انہوں نے کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا اور کئی سہولیات کو قوم کے نام وقف کیا اور کئی ایک پروجیکٹوں کا افتتاح کیا۔ وزیر اعظم کے دورہ ریاست سے قبل ہی گورنر انتظامیہ کی طرف سے وزیر اعظم کے دورے کی مصروفیات کے بارے میں پروگراموں کی بڑے پیمانے پر تشہیر کی گئی اور ان کی اہمیت بھی واضح کی گئی۔ وزیر اعظم نے جن پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا یا افتتاح کیا ان میںوادی کے لوگوں کیلئے سب سے اہم اونتی پورہ کا ایمز ہے جس کا سنگ بنیادرکھا گیا کیونکہ وادی میں ایمز کی ضرورت حد سے زیادہ محسوس کی جاتی رہی ہے۔ اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ یہاں کے ضلع ہسپتال کسی بھی طور اطمینان بخش طریقے پر اپنا کام کاج سرانجام نہیں دیتے ہیں۔ اس کی ایک نہیں ہزاروں مثالیں دی جاسکتی ہیں۔ کہاجارہا ہے کہ کسی بھی ضلع ہسپتال میں اگر شام کے بعد کوئی مریض ان ہسپتالوں میں لایا جاتا ہے تو وہاں تعینات ڈاکٹر ان کا سرسری ملاحظ کرنے کے بعد ان کو شہر کے صدر یا صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ ریفر کرتے ہیں اور اس کیلئے اس مریض کے تیمار داروں کویہ کہا جاتا ہے کہ اس مریض کا بڑے ہسپتالوں میں ہی اطمینان بخش طریقے پر علاج کیاجاسکتا ہے جبکہ لوگوں کا کہنا ہے کہ ایسا ڈاکٹر صرف اپنے آرام کیلئے کرتے ہیں۔ حال ہی میں ایک واقعہ رونما ہوا جب کپوارہ کی ایک خاتون کو لل دید ہسپتال میں داخل کرنے کی کوشش کی گئی لیکن جب ڈاکٹر نے اسے ایڈمٹ کرنے سے انکار کردیا تو اس نے سخت سردی میں سرراہ بچے کوجنم دیا۔ اس پر ماہر ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ یہ عورت آرام سے کپوارہ ہسپتال میں بچے کو جنم دے سکتی تھی لیکن اسے بقول ان کے ڈاکٹروں نے بلاوجہ لل دید ہسپتال ریفر کیا اور سخت سردی اور گاڑی میں اس حالت میں سفر کی بنا پر اس کو پیچیدگیاں پیدا ہوگئیں۔ اس سے قبل ٹنگمر گ کی ایک خاتون کو شدید درد میں مبتلا ہونے کی بنا پرصدر ہسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے کہا کہ اس کے گردے میں پتھری ہے اور اس کا اوپریشن لازمی ہے لیکن اسے اوپریشن کیلئے دو سال بعد کی تاریخ دی گئی۔ یہ حال ہمارے میڈیکل سیٹ اپ کا ہے۔ اب وزیراعظم یہاں آگئے تھے۔ تقریریں بھی کیں لیکن ان کو سب سے پہلے متعلقہ حکام کو یہ تلقین کرنی تھی کہ اونتی پورہ ایمز کی تعمیر میں کسی بھی قسم کی تاخیر نہ ہونے پائے کیونکہ یہ صحت سے جڑا معاملہ ہے اور جتنی جلد ممکن ہوسکے اس کی تعمیر شروع کی جانی چاہئے ورنہ اس کا حشر بھی جہانگیر چوک رام باغ فلائی اوور کا جیسا ہوسکتا ہے جس کی آج تک کئی ڈیڈ لائینیں مقرر کی گئیں اور جو ختم بھی ہوگئیں لیکن یہ فلائی اوور ویسے کا ویسا ہے۔ اسلئے وزیر اعظم پر لازم ہے کہ وہ اپنی مصروفیات سے تھوڑا سا وقت نکال کر ایمز اونتی پورہ کی تعمیر کی پیش رفت کے بارے میں معلومات حاصل کرتے رہیں۔ اس کے ساتھ ہی گورنر انتظامیہ کو بھی اس بات کی طرف خصوصی توجہ دینی چاہئے کہ ایمز کی تعمیر جلد از جلدپایہ تکمیل کو پہنچ جائے تاکہ صحت کے شعبے سے جو مسایل جڑے ہیں ان پر کسی حد تک قابو پانے میں مدد مل سکے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں