علی گڑھ میں معصوم کے قتل کی تحقیقات کےلئے ایس آئی ٹی جانچ کا حکم

لکھنؤ، 7 جون یو این آئی اتر پردیش حکومت نے علی گڑھ میں ڈھائی سال کی معصوم بچی کے قتل کے معاملے کی تحقیقات خصوصی تحقیقاتی ٹیم âایس آئی ٹیá کے حوالے کرنے کا اعلان کیا ہے ۔قتل کے ملزم کے خلاف پاکسو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا۔ پولیس کے ڈائریکٹر جنرل âامن و قانون á آنند کمار نے یہاں جمعہ کو صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایس آئی آئی کی تشکیل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس âدیہیá منی لال پاٹیدار کی قیادت میں کی گئی ہے جو اپنی رپورٹ 15 دن کے اندر پیش کرے گی۔ انہوں نے کہا، ‘‘فارنسک ٹیم، اسپیشل آپریشن گروپ âایس او جیá اور ماہرین کی ایک ٹیم ایس آئی ٹی کا حصہ ہو گی جو قتل سے متعلق پہلوؤں کی تحقیقات تیزی سے کرنے میں مدد کرے گی ۔ پولیس کے ڈائریکٹر جنرل نے متاثرہ کی آبروریزی کے اندیشے کو مسترد نہ کرتے ہوئے کہا کہ فارنسک تحقیقات میں حقیقی وجوہات کا پتہ چلے گا ۔دریں اثنائ بچوں کے حقوق کے تحفظ کے قومی کمیشن نے علی گڑھ شہر میں اس بچی کو قتل کرنے کے سنگین معاملے میں نوٹس لیتے ہوئے ریاستی پولیس کو پورے معاملے کی اطلاع دینے کےلئے کہا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں