بچوں کے حقوق کا تحفظ حکومت کی اوّلین ترجیح۔ خورشید احمد گنائی

سری نگر/گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی نے دُور دراز علاقوں اور قبائلی طبقوں سے تعلق رکھنے والے حساس بچوں کی فلاح و بہبود پر خصوصی توجہ مرکوز کرنے پر زور دیاہے۔مشیر موصوف نے اِن باتوں کا اِظہار سرینگر میں منعقدہ ’’ "Issues and Challenges in Ensuring Happy Childhood-A Special Focus on Jammu & Kashmir"  کے موضوع پر دو روزہ سمینار سے خطاب کے دوران کیا۔ اس سمینار کا اہتمام کشمیر یونیورسٹی کے سوشل ورکس شعبے نے سماجی بہبود محکمہ اور ایک غیر سرکاری رضا کار تنظیم کے اشتراک سے کیا ہے۔خورشید احمد گنائی نے اپنے خطاب میں آئین ہند میں درج کئی ایسی دفعات کا ذکر کیا جو بچوں کی بہبود اور اُن کے تحفظ کی ضمانت فراہم کرتی ہیں۔مشیر موصوف نے کہا کہ حکومت نے حساس بچوں کی بہبود کے لئے حال ہی میں کئی اقدامات کئے ہیں جن میں جوینائل جسٹس بورڈ اور چائیلڈ پروٹیکشن کمیٹیوں کا قیام بھی شامل ہے۔خورشید احمد گنائی نے سمینار کے منتظمین کو ہدایت دی کہ وہ اس سمینار کو فائدہ مند بنانے کے لئے ہرممکن اقدامات کریں۔بعد میں مشیرموصوف نے سٹیٹ چائیلڈ پروٹیکشن سوسائٹی سے وابستہ جنید الاسلام اور خیر النسائ کی تصنیف جو کہ جوینائل جسٹس رہنما خطوط پر مشتمل ہے ،کی رسم رونمائی انجام دی۔اس موقعہ پر کشمیر یونیورسٹی کی قائمقام وائس چانسلر پروفیسر نیلوفر خان نے صدارتی خطبہ پیش کیا۔دلی یونیورسٹی کے شعبہ قانون کے سربراہ اور ڈین پروفیسر وید کماری نے کلیدی خطبہ پیش کیا جبکہ کشمیر یونیورسٹی کے رجسٹرا ر ڈاکٹر نثار احمد نے شکریہ کی تحریک پیش کی۔ جن دیگر مقررین اس موقعہ پر اپنے خیالات کا اِظہار کیا اُن میں آئی سی پی ایس کے مشن ڈائریکٹر جی اے صوفی ، کشمیر یونیورسٹی کے سوشل ورکس شعبے کے سربراہ ڈاکٹر عادل بشیر اور غیر سرکاری رضا کار تنظیم کے نمائندے شریف بٹ شامل ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں