شعیب ملک کے بعداب حفیظ کو ریٹائرمنٹ لے لینی چاہیے :رمیز راجہ

لندن/ پاکستان ٹیم کے سابق کپتان رمیز راجہ نے ٹیم کے ورلڈکپ سے باہر ہونے کو افسوس ناک قرار دیا ہے۔ شعیب ملک کے بعد محمد حفیظ کو ریٹائرمنٹ لے لینی چاہیے اور نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دینا چاہیئے۔ لندن میں خصوصی گفتگو میں رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان ٹیم اپنی غلطیوں سے ٹورنامنٹ سے باہر ہوئی ہے۔ ٹیم میں کوئی گروپ بندی نہیں صرف کمبی نیشن کا فرق رہا ہے۔ پاکستان ٹیم کا اہم میچز میں کمبی نیشن درست نہیں تھا۔ بنگلہ دیش کے خلاف میچ میں حسنین کو بھی موقع دیا جانا چاہیئے تھا۔ ورلڈ کپ میں سینئر جونیئر کوئی نہیں ہوتا جو یہاں تک آتا ہے اسے پرفارم کرنا چاہیئے۔ اور فارم والے کھلاڑی ہی کھیلتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ٹورنامنٹ میں ہمیں اچھے کھلاڑی بھی ملے ہیں جن پر مستقبل میں بھی اعتماد کیا جا سکتا ہے۔ بابر اعظم، شاہین، امام الحق اچھا کھیلے ہیں۔ عماد وسیم اگر بنگلہ دیش کے خلاف ذمہ دار اننگز نہ کھیلتے تو نتیجہ مختلف بھی ہو سکتا تھا۔ حفیظ 38 سال کے ہو گئے ہیں انہیں بھی اب چلے جانا چاہیئے۔کیونکہ فارمیٹ بھی تبدیلی مانگتا ہے۔ پی سی بی کو اجلت میں فیصلے کرنے کی بجائے سمجھدار سے فیصلے کرنا چاہیئے یہ نہیں کہ وہاب ریاض اور عامر کو ٹورنامنٹ سے ایک ہفتہ قبل سکواڈ میں شامل کیا گیا۔ بورڈ بہتر فیصلہ کر سکتا ہے کہ کوچنگ سٹاف ان کی توقعات پر پورا اترا ہے کہ نہیں اس کے مطابق فیصلہ کرئے۔ رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ نئے ٹیلنٹ کو بیک اپ کرنے کی ضرورت ہے۔  ٹیم کی شکست سے ہمارا بھی دل دکھتا ہے۔ ورلڈ کپ میں بھارت اور آسٹریلیا کے خلاف ٹیم کو کامیابی حاصل کرنی چاہیئے تھی۔ ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں شکست پر افسوس ہی کیا جا سکتا ہے کسی کھلاڑی نے پرفارم نہیں کیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں