بہار میں سیلاب میں پھنسے سوالاکھ لوگوں کو بحفاظت نکال لیا گیا:نتیش

پٹنہ16جولائی   یواین آئی  بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے ریاست کے تقریبا 26لاکھ سیلاب متاثرین کو ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہاکہ اچانک آئے سیلاب میں اب تک پچیس لوگوں کی موت ہوئی ہے جبکہ اس میں پھنسے تقریبا سوا لاکھ لوگوں کو بحفاظت نکال لیا گیا۔ مسٹر کمار نے آج بہار اسمبلی کے دونوں ایوانوں میں سیلاب سے پیدا ہوئی صورتحال کے بارے میں کہاکہ تین ۔ چار دنوںمیں پڑوسی ریاست نیپال کے ترائی علاقوں میں گذشتہ سال کے مقابلے اس سال زیادہ بارش ہوئی جس کی وجہ سے نیپال سے نکلنے والی ندیوں میں سطح آب میں اضافہ کی وجہ سے سیلاب کی صورتحال پیدا ہوگئی۔ انہوں نے کہاکہ اچانک آئے سیلاب کی وجہ سے ریاست کے بارہ اضلاع شیو ہر ، سیتا مڑھی ،مشرقی چمپارن ، مدھوبنی ، ارریہ ، کشن گنج ، سپول ، دربھنگہ ، مظفر پور ، سہرسہ ، کٹیہار اور پورنیہ کے 78بلاکوں میں 555 پنچایتوں کی 25لاکھ 71 ہزار آبادی متاثر ہوئی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ سیلاب کے ممکنہ خطروں کو دیکھتے ہوئے پہلے سے مستعد انتظامیہ نے فوراً راحت اور بچاو کام شروع کیا ۔ راحت اور بچاوکاموں کیلئے 796افرادی قوت اور 125 موٹر بوٹ کے ساتھ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ â این ڈی آر ایف á اور ریاستی آفات مینجمنٹ â ایس ڈی آر ایف á کی 26 کمپنیاں تعینات ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ ابھی تک سیلاب میں پھنسے قریب سوالاکھ لوگوں کو بحفاظت نکال لیا گیا ہے جبکہ پچیس افراد کی موت ہوگئی ہے ۔ مسٹر کمار نے بتایاکہ متاثرہ علاقوں کیلئے 199 راحت کیمپ کھولے گئے ہیں ان کیمپوںمیں ابھی ایک لاکھ 16 ہزار 653 افراد رہ رہے ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ اس کے علاوہ 676 کمیونیٹی باورچی گھروں کا انتظام کیا گیا ہے ۔ ضرورت پڑنے پر مزید راحتی کیمپ اور کمیونیٹی باورچی گھروں کے انتظام کی ہدایت دی گئی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں