اتوار کے روز دہلی میں میرتھن دوڑ کا اہتمام کرنے پر ڈاکٹرز حیران دوڑ کا اہتمام کرنا خودکشی کے متراد ف ہوگا ، فوری طورپر پروگرام کو منسوخ کیا جائے /ڈائریکٹر ایمز

سرینگر ؍ دہلی میں اتوار کے روز منعقد کئے جارہے ہالف میرتھن کے انعقاد پر آل انڈیا میڈیکل انسٹی چیوٹ نے شدید برہمی کا اظہا رکرتے ہوئے اس سے فوری طورپر منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا۔ ڈاکٹرز کے مطابق دہلی میں کورونا وائرس کی تیسری لہر نے قہر بپا کیا ہے اس صورت میں میرتھن کا انعقاد جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے۔ ادھر میرتھن کا انعقاد کرنے والے منتظمین کا کہنا ہے کہ دوڑ کے دوران سبھی رہنما اصولوں پر من وعن عملدرآمد ہوگا۔ منتظمین کا مزید کہنا تھا کہ جواہر لال نہرو اسٹیڈیم دہلی سے میرتھن دوڑ اتوار کو شروع ہو رہی ہے جس دوران بڑی تعداد میں کھلاڑی حصہ لے رہے ہیں۔ ادھر ماہرین کا کہنا ہے کہ چونکہ دہلی میں ہوا میں بھی آلودگی پائی جارہی ہیں جبکہ کورونا وائرس مریضوں کی تعداد میں بھی غیر معمولی اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے لہذ ااس صورت میں میرتھن دوڑ کا اہتمام کرنا مصیبت کو دعوت دینے کے مترادف ہے۔ ڈاکٹرز نے دوڑ میں شرکت کرنے والے کھلاڑیوں اور منتظمین سے ایک دفعہ پھر اپیل کی ہے کہ وہ اس بارے میں پھر سے غور وغوض کریں۔ انہوںنے کہاکہ میرتھن کا اہتمام کووڈ صورتحال بہتر ہونے کے بعد بھی کیا جاسکتا ہے ۔ چھاتی امراض مر اروند کمار نے بتایا کہ دہلی میں ایک طرف فضا بھی آلودہ ہے اور دوسری جانب کورونا وائرس کی تیسری لہر نے بھی راجدھانی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے لہذا اس صورت میں میرتھن کا اہتمام کرنا خودکشی کرنے کے مترادف ہے۔
انہوںنے کہاکہ گھمبیر صورتحال ہونے کے باوجود بھی منتظمین کی جانب سے دوڑ کا اہتمام کرنا سمجھ سے بالا تر ہے۔ آل انڈیا میڈیکل انسٹی چیوٹ (ایمز ) کے ڈائریکٹر رندیپ گولیرا نے کہاکہ سمجھداری اسی میں ہے کہ میرتھن کو فی الحال رد کیا جائے۔ انہوںنے کہاکہ دہلی میں آکسیجن کی کمی بھی ہے اس صورتحال میں دوڑ میں حصہ لینے والے کھلاڑیوں کو مشکلات کا سامنا کرناپڑ سکتا ہے۔ بتادیں کہ دہلی میں کورونا وائرس کی تیسری لہر نے قہر بپا کیا ہے اور آئے روز سات ہزار کے قریب افراد کورونا وائرس کے شکار ہو رہے ہیں لہذا اس صورتحال میں میرتھن کا اہتمام کرنا دانشمندی نہیں ہوگی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں