بالی ووڈ اداکار متھن چکرورتی کو کلکتہ ہائی کورٹ سے نہیں ملی راحت

 

کولکاتا: مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے اسٹار پرچارک رہے بالی ووڈ کے مشہور اداکار متھن چکرورتی کو کلکتہ ہائی کورٹ نے راحت دینے کے بجائے جانچ کے دوران پولس کے ساتھ تعاون کرنے کی ہدایت دی ہے۔ تاہم انہیں جسمانی طور پرپیش ہونے سے چھوٹ دیتے ہوئے عدالت نے کہا کہ وہ ورچوئل پیش ہوسکتے ہیں۔ اسمبلی انتخابات کے دوران متھن چکرورتی زوردار مہم چلاتے ہوئے دعویًٰ کیا تھا کہ بی جے پی اقتدار میں آتے ہی اگلے 6مہینے میں بنگال بدل جائے گا۔ انہوں نے ترنمول کانگریس اور ممتا بنرجی کے تئیں سخت تبصرے کئے تھے۔اس کی وجہ سے ان کے خلاف کلکتہ کے ایک پولس اسٹیشن میں کیس درج کیا گیا تھا۔متھن چکرورتی نے کلکتہ ہائی کورٹ میں عرضی دائر کرتے ہوئے اپیل کی تھی کہ ان کے خلاف کیس کو خارج کیا جائے۔مگر ہائی کورٹ نے ان کی درخواست کو قبول کرنے کے بجائے پولیس تفتیش میں تعاون کرنے کی ہدایت دی ہے۔ تاہم کورونا وائرسکی وجہ سے انہیں ذاتی طور پر پیش ہونے کی چھوٹ دی گئی ہے۔ اس دن کلکتہ ہائی کورٹ نے کہاکہ اگر ضرورت ہو تو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے میتھون سے تفتیش کی جانی چاہئے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں