راجستھان میں پاکستانی سرحد کے قریب ایمرجنسی ہوائی پٹی کا افتتاح

کسی ملک کے خلا ف جارحیت کا عزائم نہیں رکھتے لیکن ملکی سالمیت اور سیکورٹی پر کوئی انچ نہیں آنے دینگے / راجناتھ سنگھ

 وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے راجستھان میں ایمرجنسی ہوائی پٹی کا افتتاح کیا جس دوران انہوں نے کہا کہ یہ ہوائی پٹی دفاعی لحاظ سے کافی اہمیت کی حامل ہے اس سے ہم دشمن ملک کے عزائم کو خاک میں ملاسکتے ہیں تاہم بھارت کسی بھی ملک کے خلا ف جارحیت کے عزائم نہیں رکھتا لیکن ملک کو دفاعی لحاظ سے مضبوط بنانے سے ملکی سلامتی بہتر ہورہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر میں پہاڑی سرحدیں ہوں یا یوٹی لداخ کی برفیلی چوٹیاں ہوں ہماری فوج ہر کسی کے محاذ پر لڑنے کی اہل ہے ۔انہوںنے کہا کہ راجستھان کی تپتی ریت پر ہمارے جوان سرحدوں کی حفاظت کرتے ہیں جس پر ملک کو فخر ہے ۔یہ ہوائی پٹی ایمرجنسی لینڈنگ کی سہولت کے لیے بنائی گئی ہے۔ اس پر آج سخوئی اور جیگوار طیاروں نے ٹچ ٹاو¿ن کیا۔ ایک سخوئی طیارے کو ہوائی پٹی پر پارک کیا گیا۔آسمان پر منڈلاتے ہوئے ہرکیولس ، جیگوار اور سخوئی طیاروں کی گڑگڑاہٹ کے درمیان وزیر دفاع نے تالیاں بجا کر خوشی کا اظہار کیا۔راجستھان میں پاکستان کی سرحد سے 40 کلومیٹر پہلے قومی شاہراہ پر وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، سڑک،ٹرانسپورٹ کے مرکزی وزیر نتن گڈکری اور آرمی چیف نے آج ہرکیولس طیارے سے اترکر نئی تاریخ رقم کی۔اسٹریٹجک لحاظ سے اہم اس قومی شاہراہ کو نیشنل ہائی ویز اتھارٹی آف انڈیا نے تعمیر کیا ہے۔ اس کے تحت باکاسر گاو¿ں کے قریب 39.95 کروڑ روپے کی لاگت سےایئر اسٹرائک بنائی گئی ہے۔مرکزی وزرا نے دہلی سے پرواز بھری تھی اور وہ جالور ضلع کے اڈگاو¿ں میں بنی ایمرجنسی ہائی وے پٹی پر اترے تھے۔ یہ ہوائی پٹی ایمرجنسی لینڈنگ کی سہولت کے لیے بنائی گئی ہے

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں