رفیع آباد میں باد پھٹنے سے خانہ بندوش کنبہ کے پانچ افراد لقمہ اجل

4افراد کی لاشیں برآمد کرلی گئیں ہیں ایک ہنوز لاپتہ ،تلاش بڑے پیمانے پر جاری

رفیع آباد بارہمولہ میں بادل پھٹنے کے نتیجے میں ایک خانہ بندوش کنبہ کے پانچ افراد لقمہ اجل بن گئے ہیںجن میں سے چار افراد لہ لاشیں برآمد کی جاچکی ہیںجبکہ ایک لاپتہ ہے ۔ اس کے علاوہ دیگر رہائشی ڈھانچوں کو بھی نقصان پہنچنے کی اطلاع ہے جبکہ ایک پُل بھی سیلابی ریلی میں بہہ گیا ہے ۔ اطلاعات کے مطابق شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں رفیع آباد کے ہمام مرکوٹ علاقے میں اُس وقت قیامت صغرا بپا ہوئی جب بادل پھٹنے کے نتیجے میں ایک رہائشی ڈھانچہ پانی کے سیلابی ریلے کی زد میں آگیا ۔ اس حادثے میں ایک ہی کنبہ کے پانچ افراد ہلاک ہوئے ہیں جن میں سے چار افراد کی لاشیں برآمد کرلی گئیںہیں جن کی شناخت شاہناز بیگم عمر 30برس اہلیہ محمد فاروق خاری ، دختر نازیہ اختر عمر 14برس ، بیٹا عارف حسین عمر 5برس اور طارق احمد خاری عمر 8برس شامل ہیں جو سبھی راجوری نوشہرہ کے رہائشی ہیںجبکہ کنبہ کا ایک فرد ہنوز لاپتہ ہے ۔ اس واقعے کی پولیس ذرائع نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ لاپتہ شخص کو ڈھونڈنے کےلئے اقدامات اُٹھائے جاچکے ہیں ۔ اس دوران سیلابی ریلی کی ز د میں آنے سے دیگر متعدد ڈھانچوں کو بھی نقصان پہنچنے کی اطلاع ہے ۔ اس کے علاوہ ڈھنگی وچہ میں ایک پُل بہہ گیا ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ سیلابی ریلے کا پانی دیگر علاقوں میں بھی گھس گیا ہے جہاںدھیان اور دیگر فصلوںکو نقصان پہنچنے کی اطلاع ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں