سرینگر میں کووڈ ٹیکہ کاری میں تیزی لانے کی ہدایت

ڈویژنل کمشنر کشمیر نے ضلع افسران کو ویکسنیشن ڈرائیو کو مشن موڈ ماڈل پر چلانے کی ہدایت

صوبائی کمشنر کشمیر پنڈورانگ کے پولے نے آج سرینگر میںکوورناوائرس ٹیکہ کاری مہم کے تحت کووڈ کنٹرول روم میں منعقدہ ایک میٹنگ کی صدارت کی ۔اس میٹنگ میں انچارج ڈویژنل کووڈ 19کنٹرول روم کشمیر طاہر احمد ماگرے ، ڈپٹی ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر عبدالرشید ، سی ایم او سرینگر ، ڈاکٹر جمیل ، ڈپٹی سی ایم او ڈاکٹر نگہت ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر فیملی ویلفیئر ڈاکٹر مسرت ، ڈاکٹر طلعت جبین اور دیگر سینئر صحت عامہ کے افسران موجود تھے ۔ ڈویژنل کمشنر نے سرینگر میں جاری کووڈ مخالف ٹیکہ کاری مہم کا جائزہ لیا اور متعلقین پر زور دیا کہ وہ ضلع میں اہل آبادی کے گروپ کی صد فیصد ٹیکہ کاری کو یقینی بنانے میں تیزی لائیں ۔ میٹنگ میں انچارج ڈویژنل کووڈ کنٹرول روم نے صوبائی کمشنر کو ضلع میں ویکسنیشن ٹیموں کے کام اور دیگر حصولیابی کی جانکاری فراہم کی ۔ اس موقعے پر ڈویژنل کمشنر نے ڈسٹرکٹ افسران اور دیگر متعلقہ افسران جو کہ میٹنگ میں موجود تھے کہ وہ ضلع میں ٹیکہ کاری میں تیزی لانے کےلئے مزید 150ٹیموں کو تشکیل دیں اور ان کو ایسی جگہوں پر لگائیںجہاں پر ٹیکہ کاری میں سست رفتاری محسوس ہو۔ ڈویژنل کمشنر نے سی ایم او سرینگر کو ہدایت دی کہ وہ ضلع کے ان علاقوں کی نشاندہی کریں جہاں پر کووڈ ویکسنیشن میں سست رفتاری ہو ۔ انہوںنے ہدایت دی کہ مرکزی سرکار کے اداروں ، یوٹی گورنمنٹ اداروں، کوچنگ سنٹروں ، بس سٹینڈوں ، ٹرانسپورٹ یارڈوں ، ریلوے سٹیشنوں ، شاپنگ کملیکس ، بڑے بازاروں ، مساجد ، آستانوں اور ضلع کورٹ ، ہائی کورٹ ، فروٹ اور ویجی ٹیبل منڈیوں ، پارکوں، باغات ،یونیورسٹیوں اور کالجوں میں ٹیکہ کاری میں تیزی لائیں۔انہوںنے ضلع میں روزانہ 25000ویکسین لگانے کی ہدایت کی ۔ انہوںنے کہا کہ ضلع میں ویکسنیشن ٹیموں کو 75سے بڑھا کر 225کردیا گیا ہے تاکہ 100فیصدی ٹیکہ کاری کاوریج حاصل کیا جاسکے ۔انہوںنے کہا کہ کووڈ کا دوسرا ڈوز مقرر تاریخ پر دیا جانا چاہئے ۔اس کے علاوہ انہوںنے کووڈ طرز عمل کی پاسداری کو یقینی بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ متعلقہ ٹیموں کو مانیٹرنگ کے عمل کو مزید سخت کرنا ہوگا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں