آئندہ 24گھنٹوں میںموسمی صورتحال میں تبدیلی کے امکانات - یخ بستہ ہوائیں چلنے سے سردی کی شدت میںاضافہ، لوگوں کو معقول ملبوسات زیبِ تن کرنے کا طبی ماہرین کا مشورہ

سرینگر/وادی اوریہاں رہنے والے لوگوں کواگلے2یا3روزکے اندرطویل خشک سالی سے نجات مل جائیگی ۔محکمہ موسمیات کے علاقائی ڈائریکٹرسونم لوٹس نے یہ امکان ظاہرکیاکہ 14اور15نومبرکوکشمیروادی میں ہلکی بارش ہونے سے خشک موسمی صورتحال میں تبدیلی آئے گی۔انہوں نے کہاکہ وادی میں ماہ اگست اورستمبرمیں ہلکی بارشیں ہونے کے علاوہ 15اکتوبرکوکچھ بالائی علاقوں میں برف باری بھی ہوئی ۔سونم لوٹس کاکہناتھاکہ یہ پہلاموقعہ نہیں کہ کشمیروادی میں مسلسل کئی مہینوں تک موسمی صورتحال خشک رہی بلکہ ماضی میں بھی کئی مارتبہ ایسی صورتحال پیداہوتی رہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ سال۷۰۰۲ئ میںنومبراوردسمبرکے دوران کوئی بارش یابرف باری نہیں ہوئی تھی جبکہ سال 2016میں لگ بھگ 5ماہ تک خشک موسمی صورتحال کاسلسلہ جاری رہا۔انہوں نے یہ امکان ظاہرکیاکہ  14 او ر15 نومبرکوکشمیروادی میں ہلکی بارش ہونے سے خشک موسمی صورتحال میں تبدیلی آئے گی۔سونم لوٹس نے کہاکہ وادی میں ماہ اگست اورستمبرمیں ہلکی بارشیں ہونے کے علاوہ 15اکتوبرکوگلمرگ کے بالائی علاقوں میں برف باری بھی ہوئی۔تاہم ماہرموسمیات کاکہناتھاکہ خشک سالی یاخشک موسمی صورتحال کاتسلسل کوئی اچھی بات نہیں ہے کیونکہ یہ موسمیاتی بدلائوکی جانب اشارہ کرتاہے ۔انہوں نے کہاکہ سال2016کے بعد 2017میں بھی ایسی صورتحال کاپیداہوناٹھیک نہیں ہے ۔اس دوران اتوارکوپورے دن سری نگرسمیت وادی کے بیشترعلاقوں میں بیشتروقت مطلع ابروآلودرہاجبکہ یخ بستہ ہوائیں چلنے کے باعث سردی کی شدت میں بھی اضافہ ہوا۔شہرسرینگراوروادی کے تمام چھوٹے بڑے بازاروں میں سنڈے مارکیٹ بھرے نظرآئے ۔ہرطرف چھاپڑی فروش گرم ملبوسات کم قیمتوں پرفروخت کرنے کی آوازیں لگاکرخریداروں کواپنی جانب راغب کرنے کی کوشش کرتے رہے۔خریداری کیلئے بازاروں کارُخ کرنے والے بیشترلوگ بشمول مردوزن اورخواتین گرم ملبوسات بشمول بنیان ،جیکٹ وغیرہ ہی خریدتے نظرآئے جبکہ گرم کمبل اوردیگرایسی چیزوں کی خریداری بھی اچھی رہی ۔اُدھرطبی ماہرین نے اہل وادی کومعقول ملبوسات زیب تن کرنے کامشورہ دیتے ہوئے خبردارکیاکہ علی الصبح اورشام کے اوقات میں نقل وحمل محدودکرنے کیساتھ ساتھ کھانے پینے میں بھی احتیاط برتی جائے ۔طبی ماہرین نے بتایاکہ وادی میں خشک موسمی صورتحال طول پکڑچکی ہے ،جسکے نتیجے میں غیرمتوقعہ طورپرسردی کی شدت میں بھی کافی اضافہ ہواہے ۔انہوں نے کہاکہ ایسے موسم میں نزلہ ،زوکام ،کھانسی اوربخارجیسی بیماری پھیلتی ہے ،اسلئے لوگوں کواپنے پہنائوے اورکھانے پینے کے ساتھ ساتھ اپنی نقل وحمل میں بھی احتیاط برتنی چاہئے ۔ایک سینئرمعالج نے نام مخفی رکھنے کی شرط پرخبردارکیاکہ موجودہ موسمی صورتحال ‘سوائن فلو‘جیسی بیماری کیلئے موزون مانی جاتی ہے ،اسلئے ہرخاص وعام کوبیماریوں سے بچنے کیلئے خوداحتیاط اورپرہیز کرناچاہئے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں