ممبئی میں سنسنی خیز بینک ڈکیٹی، پولیس کو ابھی تک کوئی سراغ نہیں ملا

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾ممبئی میں دو دن قبل ایک بینک میں سنسنی خیز طریقے سے ڈاکہ زنی کے معاملے میں پولیس کو تاحال مجرموں تک پہنچنے کا کوئی سراغ ہاتھ نہیں لگا ہے۔ مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق لٹیروں نے بینک سے منسلک عمارت میں ایک گہری سرنگ کھودنے کے بعد بینک میں ڈاکہ ڈالا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ 25فٹ گہری سرنگ کو کھودنے میں لٹیروں کو کم از کم چار ماہ کا وقت لگا ہے۔ بینک حکام ابھی تک چرائی گئی رقم اور زیورات کی کل مالیت کا اندازہ لگانے میں لگے ہوئے ہیں۔ بی بی سی کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعے کے منصوبہ سازوں نے بینک آف بروڈا کی عمارت کے ساتھ والی جگہ کرائے پر لی تھی تاکہ وہ بینک میں چوری کرنے کے لیے سرنگ کھود سکیں۔یہ چوری کرنے والوں نے ساتھ والی دکان میں ایک روزمرہ اشیا کی دکان بنائی تھی تاکہ کسی کو بھی اس حوالے سے شک نہ ہو۔مقامی میڈیا کے مطابق یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب پیر کے روز بینک ملازمین نوکری کے لیے پہنچے۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ یہ چوری سنیچر کی شب کی گئی۔اب تک یہ ظاہر نہیں کہ کسی کو شک پڑے بنا کئی ماہ تک یہ چور سرنگ کھونے میں کیسے کامیاب ہوئے۔بینک کے بہت سے پریشان صارفین سے بات کی جن میں کچھ کا کہنا تھا کہ ان کی عمر بھر کی جمع پونجی بینک میں لاکروں میں موجود تھی اور اب وہ لٹ گئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ بینک کے 225 میں سے 30 لاکروں میں چوری کی گئی ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں