چین پاکستان کے ساحلی علاقے میںدوسرا بڑا بحری اڈہ بنانے کی تیاری کررہا ہے

بیجنگ/ امریکہ کی طرف سے پاکستان کیلئے فوجی امداد بند کئے جانے کے بعد چین پاکستان کی امداد کیلئے آگیا ہے جبکہ چین پاکستان کیلئے دوسرا بڑا بحری اڈہ بنانے کی تیاری کررہا ہے جس کیلئے پاکستانی گوادر ساحل میں ایک خاص مقام کو استعمال کیا جائے گا۔ چین کے ایک اخبار ساوتھ چینا مارننگ پوسٹ کے ایک رپورٹ کے مطابق گوادر ساحل چین اور پاکستان کی اقتصادی ترقی کیلئے ایک راہداری کی حیثیت رکھتا ہے۔ ذرائع کے مطابق پیپلز لبریشن آرمی ﴿پی ایل اے﴾ گوادر میں بننے والا بحری اڈ ڈجیبوٹی علاقے میں پہلے سے موجود بحری اڈے کی طرح ہوگا۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ اگرچہ اس بحری اڈے سے کسی جنگی جہاز کو اڑان بھرنے میں مشکلات کا سامنا ہوگا تاہم فی الحال اس اڈے کو بحری ساز و سامان ذخیرہ کرنے کیلئے استعمال میں لایا جائے گا اور جنگی جہازوں کے اڑان کیلئے دوسری جگہ کا انتخاب کیا جاسکتا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں