عرب ممالک مشرقی یروشلم کو فلسطین کے دارالحکومت کے حق میں  بین الاقوامی برادری سے منظوری کی اپیل اگلے ہفتے اپیل کرینگے

دبئی/ اُردن نے کہا ہے کہ مشرقی یروشلم کو فلسطین کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرانے کے لئے بین الاقوامی برادری سے منظوری کی اپیل کریں گے۔ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کئے جانے کے فیصلے کے بعد اگلے مرحلے پر بحث کے لئے چھ عرب ممالک کے وزرائے خارجہ اور عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل نے کل ایک میٹنگ کی ہے۔ سعودی عرب کے اخبار’عرب نیوز‘کے مطابق اردن کے وزیر خارجہ ایمن صفادی اور عرب لیگ کے سربراہ احمد ابو غیث نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں مشرقی یروشلم کو فلسطین کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔ اس اجلاس میں مصر، سعودی عرب، مراکش، متحدہ عرب امارات اور فلسطین کے وزرائے خارجہ نے حصہ لیا ہے ۔ مسٹر صفادي نے کہا '' یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرنا ایک سیاسی فیصلہ ہے اور ہم مشرقی یروشلم کو فلسطین کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرانے کے لئے ایک بین الاقوامی سیاسی فیصلے تک پہنچنے کی کوشش کریں گے ''۔ مسٹر غیث نے کہا کہ یروشلم کے معاملہ پر بحث کرنے کے لئے اس ماہ کے آخر میں عرب ممالک کے وزرائے خارجہ کی ایک اور میٹنگ کی جائے گی۔ دنیا کے 120 ممالک نے مسٹر ٹرمپ کے یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کئے جانے کے اعلان کی مخالفت کرتے ہوئے امریکہ سے اپنا فیصلہ تبدیل کرنے کے لئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی تجویز کے حق میں ووٹ کیا تھا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں