آدھار کا استعمال مودی سرکار جاسوسی میں کررہی ہے :کانگریس

نئی دہلی/یواین آئی/ کانگریس نے مودی سرکار پر آدھار کارڈ کا استعمال جاسوسی اور نگرانی کیلئے کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کل کہا کہ اس کے اصل مقصد سے ہٹا دیا گیا ہے ۔ کانگریس کی ترجمان شوبھا اوجھا نے کل یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر پر نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آدھار کارڈ کا تصور حقیقتا غریبوں کو ان کا حق دینے کے لئے پیش کیا گیا تھا اور اس سے متعلق اسکیموں کا مقصد غریبوں کی مدد کرنا تھا۔ محترمہ اوجھا نے کہا کہ مودی حکومت کی ضد کی وجہ سے آدھار کارڈ اپنے اصل مقاصد سے ہٹتا جارہا ہے ۔ سرکار اس کا استعمال جاسوسی اور نگرانی کے لئے کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گجرات کے وزیراعلیٰ رہتے ہوئے مسٹر نریندر مودی آدھار کارڈ کو سیکورٹی کے لئے بڑا خطرہ بتاتے رہے لیکن فی الحال انہوں نے اس سے متعلق خطرات کو نظرانداز کردیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے خود عدالت میں آدھار کارڈ کے ڈاٹا چوری ہونے کا اعتراف کیا ہے ۔ کانگریس رہنما نے کہا کہ آدھار کارڈ کے سلسلے میں حکومت آمرانہ سوچ کے ساتھ کام کررہی ہے اور جو لوگ آدھار سے متعلق خامیاں سامنے لاتے ہیں سرکار انہیں دور نہیں کرتی بلکہ لوگوں کو سزا دینے میں لگ جاتی ہے ۔ واضح رہے کہ آدھار کارڈ سے متعلق ڈاٹا محض پانچ سو روپئے میں فروخت ہونے کا معاملہ سامنے آنے پر ایک صحافی کے خلاف حکومت نے ایف آئی آر درج کرائی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں