سعودی عرب کی تاریخ میں میں پہلی بار خواتین نے سٹیڈیم میں فٹ بال میچ دیکھا

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾سعودہ عرب کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کو سٹیڈیم جاکر میچ دیکھنے کی آزادی مل گئی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق آج سعودی شہر جدہ کے ایک اسٹیڈیم میں ہوا جہاں دو مقامی فٹ کلبس کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہوا۔دونوں کلبس کے پسندیدہ کھلاڑیوں کوخواتین نے جوش و جذبے کے ساتھ سراہا اور یقیناً کھلاڑیوں کے بھی حوصلے خواتین کے جذبے کو دیکھ کر بڑھتے محسوس ہوئے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سٹیڈیم میں داخلے کے لیے خواتین کے لیے الگ گیٹ بنایا گیا تھا۔ خواتین کی رہنمائی کے لئے خواتین پر مشتمل عملہ بھی تعینات کیا گیا تھا۔روایتی کالے حجاب میںموجود خواتین اہلکاروں نے شائقین کو خوش آمدید کہا اور میچ کے دروان بلند آواز میں دونوں ٹیموں کی حوصلہ افزائی کی۔قابل ذکر ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے خواتین کے حقوق اور اختیارات پر پہلے سے موجود عائد پابندیوں کو کم کرنے کا آغاز کیا ہے۔ جس کے تحت گاڑی چلانے کی اجازت، تفریح کے لیے گھر کی بجائے کھیل کے میدان میں جانے اور سینما گھروں کے قیام کا موقع تاریخ میں پہلی بار ممکن ہوسکا ہے۔اس سے قبل سعودی فرمانروا شاہ سلمان نے گزشتہ برس خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت بھی دی تھی جس کا اطلاق رواںسال جون سے ہوگا جبکہ گزشتہ روز جدہ میں خواتین کیلئے کار شو روم بھی کھولا گیا ہے۔ دوسری جانب مارچ میں وہاں سینما ہالز بھی باقاعدہ کھل جائیں گے ،جس کے لئے ہالی ووڈ اور بالی ووڈ کے علاوہ دنیا بھر کیپروڈیوسرز اور ڈائریکٹرز نے اپنی اپنی فلموں کی نمائش کے لیے رابطے شروع کردئیے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں