حسیب درابو کو کابینہ سے ہٹانے کے بعد
 نئی دہلی میں بھاجپا کی ہنگامی میٹنگ ریاستی بی جے پی لیڈروں کوفوری طور پر نئی دہلی طلب کیاگیا

سرینگر/جے کے این ایس /حسیب درابو کو وزارت سے ہٹانے کے بعد بھارتیہ جنتاپارٹی کی مرکزی قیادت نے ریاستی لیڈروں کو ہنگامی طورپر نئی دہلی طلب کیا ۔ بی جے پی ذرایع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ نئی دہلی میں بھاجپا مرکزی اور ریاستی لیڈروں کے درمیان اس معاملے پر گفت شنید ہوگی ۔ پی ڈی پی سینئر لیڈر حسیب درابو کو وزارت سے ہٹانے کے بعد بھارتیہ جنتاپارٹی میں ہلچل مچ گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ نئی دہلی میں بھارتیہ جنتاپارٹی کے سینئر لیڈروں کے درمیان اس معاملے پر میٹنگ منعقد ہوئی جس دوران فیصلہ لیا گیا کہ ریاستی بی جے پی لیڈروں کے ساتھ اس سلسلے میں گفت شنید ہوگی ۔ نمائندے کے مطابق بی جے پی مرکزی قیادت کے درمیان میٹنگ کے بعد ریاست کے سینئر بھارتیہ جنتاپارٹی کے لیڈروں کو ہنگامی طورپر نئی دہلی طلب کیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ بی جے پی اس معاملے پر حسیب درابو اور پی ڈی پی کے درمیان غلط فہمی کو دور کرنے کی کوشش کر رہی ہے تاہم پی ڈی پی نے بی جے پی پر واضح کردیا ہے کہ حسیب درابو کو کابینہ سے ہٹانے کا فیصلہ پارٹی کا اندرونی مسئلہ ہے اور بی جے پی کو اس میں ٹانگ اڑانے کی ضرورت نہیں ۔ ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ بی جے پی کی مرکزی قیادت نے فیصلہ کیا ہے کہ اس ضمن میں ریاست کی وزیرا علیٰ محبوبہ مفتی /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
سے بات کی جائے گی۔ بی جے پی کے ایک سینئر لیڈر نے خبر رساں ایجنسی جے کے این ایس کو بتایا کہ حسیب درابو کو کابینہ سے ہٹانے کا فیصلہ اگر چہ پارٹی کا اندرونی معاملہ ہے تاہم بی جے پی کی مرکزی قیادت نے اس کا سنجیدہ نوٹس لیا ہے کہ کن وجوہات کی بنا پر سینئر لیڈر کو کابینہ سے ہٹایا گیا ۔ مذکورہ لیڈر کے مطابق مرکزی ہائی کمانڈ نے اس سلسلے میں پی ڈی پی کے ساتھ بھی بات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں