میڈیکل طالب علم کی اچانک گمشدگی کے بعد  کپوارہ کے2نوجوان بھی لاپتہ ہوگئے

سرینگر/طارق راتھر /اے پی آئی /پنجاب سے جموں لوٹنے والے پیشے کے لحاظ سے دو مزدوروں کا لواحقین کے ساتھ مواصلاتی رابطہ منقطع ہونے کے بعد لواحقین ان کی سلامتی کے حوالے سے فکر وتشویش میں مبتلا ۔ ایس ایس پی کپوارہ کے مطابق پیشے کے لحاظ سے مزدوروں کے بارے میں اتہ پتہ لگانے کی کارروائی شدو مد سے جاری ۔ عبدالعزیز چوپان اور فاروق احمد چوپان ساکنان کرالہ پورہ کپوارہ نامی پیشے کے لحاظ سے مزدور پنجاب سے جموں آرہے تھے کہ اس دوران ان کا لواحقین کے ساتھ اچانک مواصلاتی رابطہ منقطع ہوا جسے لواحقین فکر وتشویش میں مبتلا ہو گئے ہیں اور انہوںنے پولیس اسٹیشن کپوارہ میں رپورٹ درج کی ۔/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 جب ایس ایس پی کپوارہ شمشیر حسین کیساتھ رابطہ قائم کیا اور ان سے2مزدوروں کے بارے میں دریافت کیا تو انہوں نے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ یہ بات صٰیح ہے کہ پنجاب سے جموں لوٹنے والے کرالہ پورہ کے 2افراد کا اپنے لواحقین کے ساتھ مواصلاتی رابطہ منقطع ہو گیا ہے ،پولیس اس معاملے کا باریک بینی سے جائز ہ لے رہی ہے کہ مذکورہ افراد نے خود ہی رابطہ منقطع کیا ہے یا ان کے ساتھ کوئی انہونی واقع پیش آیا ہے ۔ ایس ایس پی کے مطابق معاملے کی تحقیقات شدو مد سے شروع کی گئی ہے اور جلد ہی حقائق منظر عام پر لائے جائیں گے ۔ واضح رہے کہ ایک ماہ پہلے بنیشوار اڑیسہ میں ایم بی بی ایس کا طالب علم بھی پُر اسرار طو ر پر لاپتہ ہوا ہے اور پولیس اسے ابھی تک بازیاب کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں