قتل و غار ت گری ،گرفتاریوںسے تحریک آزادی کو دبایا نہیں جاسکتا:مولانا عباس انصاری

سرینگر/اتحاد المسلمین نے شوپیاں معرکہ میں جانبحق ہوئے نوجوانوں کو خراج پیش کیا ہے تنظیم نے بھارت کی جانب سے کشمیر میں اپنائے جانے والے انسانیت کش پالسیوں پر شدیدتشویش کا اظہار کیا ہے اپنے ایک بیان میں اتحاد المسلمین کے سربراہ و سینئیر حریت رہنما مولانا عباس انصاری نے آئے روز کشمیری نوجوانوں کو ابدی نیند سلانے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کشمیری کی نسل کشی کا سختی سے نوٹس لیں۔انصاری نے کہا کہ بھارت منصوبہ بند طریقوں سے کشمیر میں قتل و غارتگری کا ماحول گرم کررہا ہے اس سلسلے میں اسرائیل جیسے درندوں سے بھر پور مدد لیا جارہا ہے ۔مولانا انصاری نے کہا کہ کشمیر میں بھارتی سفاک و جابر حکمرانوں نے اپنے چیلوں کو سرگرم کررکھا ہے جو ان کے تصویروں میں رنگ بھر کر لالہ زار کو قبرستان میں تبدیل کرنے میں اپنا اہم رول ادا کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ کشمیر میں جنگل راج قائم ہے جنہیں حق اور انصاف سے کوئی لینا دینا نہیں بلکہ وہ اپنے آقاؤں کو خوش رکھنے کیلئے کشمیری مظلوم قوم پر ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھارہے ہیں اور آئے روز کشمیر میں تعلیمی اداروں کو بنداور انٹرنیٹ پر پابندی لگا کر انسانی حقوق کی دھجیاں اڑا رہے ہیں ۔مولانا عباس انصاری نے کہا کہ کشمیر میں قتل و غارتگری ،حریت پسندرہنماوں کی گرفتاریوں اور نت نئے بھارتی حربوں سے تحریک آزادی کچلنے والی نہیں ہے بلکہ کشمیری قوم حصول آزادی تک بھارت کے اس جابرانہ قبضہ کے خلاف جوش و جذبہ کے ساتھ ڈٹ کر مقابلہ کریں گے ۔مولانا انصاری نے کہا کہ کشمیر میں شدت پسند ہندو تنظیموں کی دہشت گردی کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ اگر کشمیر میں بے جی پی اور ایکتا دل جیسی تنظیموں کی دہشت گردی برقرار رہی تو وہ اس کے بھانک نتائج برآمد ہونگے انہوں نے کمسن مظلومہ آصفہ کے عصمت دری و قتل میں ملوث شیطان صفت انسان کو چھپانے کی سازش پر شدید افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے انسانیت پر بدترین حملہ قرار دیا مولانا نے کہا کہ عالمی انسانی حقوق کی تنظیموں کو غیر جانبداری کا مظاہرہ کرکے ملزم کو سولی پر چڑھانے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا چاہئے مولانا نے شوپیان معرکہ میں جانحق ہوئے نوجوانوں کو خراج پیش کیا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں