شرمناک تبصرہ کرنے پر  بنک ملازم نوکری سے برطرف

تیرو وننتھ پورم /کیرالا میں ایک بنک ملازم کو آصفہ کی آبرو ریزی اور قتل کیس کے سلسلے میں ایک انتہائی شرمناک تبصرہ کرنے پر ملازمت سے ہاتھ دھونے پڑے ۔اطلاع کے مطابق کیرالا کے رہنے والے ایک شخص وشنو نندکمار نے سماجی رابطے کی سائیٹ فیس بک پر معصوم آصفہ سے متعلق ایک انتہائی شرمناک تبصرہ کرتے ہوے لکھا کہ اچھا ہوا کہ وہ اس عمر میں مرگئی نہیں تو بڑی ہوکر وہ ہندوستان کے خلاف خود کش بمبار بن کر سامنے آتی ۔شخص مذکورہ کوٹک مہندرا بنک میں بحیثیت اسسٹنٹ منیجر کام کرتا تھا ۔اس کا تبصرہ وائیرل ہونے کے بعد بنک حکام نے اسے نوکری سے برخاست کردیا ۔بنک حکام نے کہا کہ ایسے سانحہ کے بعد ایسا تبصرہ انتہائی قابل افسوس ہے جس کی بنک انتظامیہ مذمت کرتا ہے ادھر بھارت کی بعض ٹیلی ویثرن چینلوں کی طرف سے آصفہ قتل کیس کے سلسلے میں جو حد درجہ شرمناک تبصرہ کیا جارہا ہے مہذب دنیا میں اس کی کہیں مثال نہیں ملتی ہے ان چینل مالکوں کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ انہوں نے چند ٹکوں کے عوض اپنے ضمیر کو گروی رکھا کیونکہ جس وقت دہلی کی ایک چلتی بس میں ایک دوشیزہ کی عصمت دری اور قتل کا واقعہ پیش آیا اس پر کشمیر میں کئی دنوں تک زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور قاتلوں کو کڑی سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں