سابق اراکین پارلیمنٹ کی پنشن اور بھتہ ختم کرنے سے متعلق عرضی خارج

نئی دہلی،16اپریل ﴿یو این آئی﴾ سپریم کورٹ نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہ اور بھتوں کے ریگولیشن اور سابق اراکین پارلیمنٹ کی پنشن ختم کرنے سے متعلق عرضی آج خارج کردی۔ جج جستی چلمیشور اور جج سنجے کشن کول پر مشتمل بنچ نے لکھنو کی غیرسرکاری تنظیم 'لوک پرہری' کی عرضی کا نپٹارہ کرتے ہوئے کہاکہ الہ آباد ہائی کورٹ کے فیصلہ کے خلا ف اپیل خارج کی جاتی ہے ۔ عرضی گزار نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخؤاہ ، بھتے اور پنشن قانون 1954میں ترمیم کو منسوخ کرنے کی درخواست کی تھی۔ عرضی گزار نے سابق اراکین پارلیمنٹ کو پنشن اور دیگر سہولیات فراہم کرائے جانے کے التزامات کو بھی چیلنج کیا تھا۔ عدالت نے گزشتہ سات مارچ کو اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ عرضی گزار کی جانب سے وکیل ایس این شکلا نے جبکہ مرکزی حکومت کی طر ف سے اٹارنی جنرل نے معاملہ کی پیروی کی تھی۔ عرضی گزار کی دلیل تھی کہ رکن پارلیمان نہ رہنے کے باوجود ان لوگوں کو پنشن اور دیگر بھتہ دے ئے جاتے ہیں جو آئین کے آرٹیکل 14میں درج یکسانیت کے حق کی خلاف ورزی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں