امریکی نائب صدر کے مشیر کا استعفیٰ

واشنگٹن ،16اپریل ﴿رائٹر﴾ امریکی نائب صدر مائک پینسے کے نئے قومی سلامتی مشیر جان لرنر نے تقرری کے دو دن بعد ہی اپنے عہدہ سے استعفی دے دیا ہے ۔ وہائٹ ہاوس کے حکام نے بتایا کہ مسٹر لرنر نے کل رات اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ انکی تقرری کا اعلان جمعہ کی رات کو کیا گیا تھا۔ وہ اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نکی ہیلی کے چوٹی کے اسسٹنٹ تھے ۔ نائب صدر دفتر نے جمعہ کی رات جاری ایک بیان میں ان کی تقرری کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ مسٹر لرنرخارجہ پالیسی امور پر نائب صدر کے چوٹی کے مشیر ہوں گے لیکن اتوار کی رات کو ایک نیا بیان جاری کیا گیا کہ انہوں نے اپنے عہدہ سے استعفی دے دیا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ دراصل صدر ڈونالڈ ٹرمپ کو ان کے اسٹاف کے حکام نے بتایا تھا کہ وہ 'ٹرمپ مخالف یعنی نیور ٹرمپر' ہیں۔ صدارتی انتخابات سے پہلے 2016میں مسٹر لرنر نے پارٹی امیدوار کے طورپر ری پبلکن رکن پارلیمان مارکو روبیو کے نام کی حمایت کی تھی۔ اطلاع اور معلومات سے متعلق ویب سائٹ ایکسی اوج کے مطابق مسٹر ٹرمپ نے اپنے چیف آ ف اسٹاف جان کیلی کو مسٹر لرنر کی تقرری منسوخ کرنے کو کہا تھا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق وہ محترمہ ہیلی کے اسسٹنٹ کے طورپر کام کرتے رہیں گے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں