فاقہ کشی سے جسم میں نئی سٹیم سیلز کی تخلیق ہوتی ہے

نیویارک،8مئی ﴿یو این آئی﴾ کئی دہائیوں کی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ کم کیلوریز والی خوراک پر سختی سے عمل اور اس کا مسلسل استعمال طویل اور صحت مند زندگی کا راز ہے ۔ لیکن ایسا آخر کیوں ہے ؟ ’سائنس میگزین‘میں شائع ایک نئی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ فاقہ کشی کے نتیجے میں خلیوں میں توڑ پھوڑ کا عمل تیز اور نئے خلیوں کی تخلیق کا عمل تیزی سے متحرک ہو جاتا ہے ۔ چوہوں پر کی جانے والی تحقیق کے مطابق فاقہ کشی کے نتیجے میں معدے اور آنتوں میں اسٹیم سیلز کی تخلیق نو کا عمل شروع ہو جاتا ہے ۔’سائنس میگزین میں شائع رپورٹ کے مطابق، جیسے جیسے ہم بوڑھے ہوتے جاتے ہیں، اسٹیم سیلز کی تخلیق کا عمل سست پڑ جاتا ہے اور بالآخر بند ہو جاتا ہے ، اور چونکہ یہ خلیے زندگی کیلئے اہم اور صحت مند بافتوں کو برقرار رکھنے کیلئے ضروری ہوتے ہیں اور بیماریوں سے لڑتے ہیں اسلئے فاقہ کشی کا یہ طریقہ ماہرین کیلئے دلچسپی کا باعث بنا ہوا ہے۔ امریکہ کی سر فہرست یونیورسٹی میساچیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ﴿ایم آئی ٹی﴾ کے ماہر حیاتیات اومر یلماز کا کہنا ہے کہ فاقہ کشی کے معدے پر گہرے اثرات مرتب ہوتے ہیں جس میں خلیوں کی از سر نو تخلیق کا عمل تیز کرنا اور معدے اور آنتوں کو متاثر کرنے والی بیماریوں کا خاتمہ شامل ہے ، ان میں کچھ انفکشن اور کینسر بھی شامل ہیں۔ فاقہ کشی کے نتیجے میں ایسے اسٹیم سیلز بھی تخلیق ہوتے ہیں جو کاربوہائیڈریٹس کو استعمال کرتے ہیں نتیجتاً جسم سے چربی خارج ہوتی ہے اور موٹاپا کم ہوتا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں