معصوم فلسطینیوں پر حملے، اسرائیل کی ننگی جارحیت: اتحاد المسلمین، امریکی سفارتخانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اقدام اسرائیل کے تابوت میں آخری کیل: مولانا عباس

سرینگر/ جموں و کشمیر اتحاد المسلمین نے معصوم فلسطینی عوام پر اسرائیلی بربریت کی سخت مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مظلوم فلسطینی عوام کو تحفظ دیں۔تنظیم کے سربراہ و بزرگ مزاحمتی رہنما مولانا محمد عباس انصاری نے کل فلسطینیوں کی مظلومانہ شہادت پر شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانان عالم اسرائیل کی جارحیت پر مزید خاموش نہیں رہ سکتے ہیں۔ انہوں نے حالیہ سرائیلی بربریت کو ناقابل برداشت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی بربریت بین الاقوامی اصولوں اور انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہیں جس پر اقوام متحدہ کی خاموشی مجرمانہ فعل ہے۔ انصاری صاحب نے کہا کہ اسرائیل ایک غاصب صیہونی ریاست ہے اور اس غاصب ریاست کو کسی بھی صورت میں قبول نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بیت المقدس اسرائیل کی میراث نہیں ہے بلکہ مسلمانان عالم کے دلوں کی دھڑکن ہے جس کی بے حرمتی اور ناجائز قبضہ سے دنیا میں طوفان بھڑک اٹھے گا۔ عباس صاحب نے کہا کہ غاصب اور منحوس صیہونی ریاست کا وجود صفحہ ہستی سے بہت جلد مٹ جائے گا کیونکہ آئے روز اسرائیل کی ننگی جارحیت پر مسلمانان عالم مزید خاموش نہیں رہ سکتے ہیں۔ انصاری صاحب نے کہا کہ امریکی سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اقدام اسرائیل کے تابوت میں آخری کیل ہے جس کا اندازہ اسرائیل اور اس کے پشت پناہوں کو بہت جلد ہوگا۔ انصاری نے اسرائیل کے ہاتھوں جانبحق ہونے والے فلسطینی شہدائ کو خراج پیش کرتے ہوئے کہا کہ شہدائ کا مقدس لہو ضرور رنگ لائے گا جو طوفان بن کر اسرائیل کو صفحہ ہستی سے مٹادے گا۔ مولانا انصاری نے کشمیر کی صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے ہاتھ مظلوم کشمیری عوام کے خون سے رنگے ہوئے ہیں جو اسرائیل سے بھر پور مدد لے کرکشمیری قوم کی نسل کشی کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ طاقت کے بل بوتے پر نہ کشمیری قوم کی تحریک آزادی کو دبایا جاسکتا ہے اور نہ ہی فلسطینی قوم کو ڈرایا دھمکایا جاسکتا ہے۔ مولانا عباس انصاری نے اقوام متحدہ، مسلمان حکمرانوں اور او آئی سی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بھارت اور اسرائیل کی دہشتگردی پر روک لگانے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے امت مسلمہ سے بھی اپیل کی کہ وہ متحد ہوکر کشمیری اور فلسطینی قوم کی دفاع کیلئے متحد ہوجائیں اور ان کو تحفظ دینے کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھائیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں