بی جے پی اخلاقیات کی بات نہ کرے :غلام نبی آزاد

بنگلور، 15 مئی ﴿یو این آئی﴾ کانگریس کے جنرل سکریٹری غلام نبی آزاد نے آج کہا کہ کرناٹک میں کسی بھی پارٹی کو واضح اکثریت نہیں ملنے کے پیش نظر آئینی دفعات کے مطابق گورنر کو کانگریس اور جنتا دل ﴿ایس﴾ کے اتحادکو حکومت بنانے کیلئے مدعو کرنا چاہئے کیونکہ دونوں پارٹیوں کے پاس واضح اکثریت سے زیادہ تعداد ہے۔ مسٹرغلام نبی آزاد نے یہاں کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کو ہمیں اخلاقیات کا سبق نہیں پڑھانا چاہئے ۔ گوا، منی پور اور میگھالیہ میں سب سے بڑی پارٹی نہ ہونے کے باوجود بی جے پی نے اپنی حکومتیں بنائی ہیں۔ آئینی اصول کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس میں جموں و کشمیر میں ان کی اپنی ہی مثال ہے۔وہاں 2002 میں فاروق عبداللہ کی نیشنل کانفرنس سب سے بڑی پارٹی کے طور پر ابھری تھی اور کانگریس دوسرے اور مفتی محمد سعید کی پارٹی پی ڈی پی تیسرے نمبر پر تھی۔ کانگریس لیڈر نے کہا کہ جب انہوں نے خود اس وقت کے گورنر سے بات کی تو گورنر نے ان سے کہا کہ اگر پہلے نمبر پر رہنے والی پارٹی کے پاس اکثریت ہوگی تو وہ اسے ہی حکومت بنانے کیلئے مدعو کریں گے لیکن اگر دوسرے اور تیسرے نمبر پر رہنے والی پارٹیاں مل کر واضح اکثریت کے ساتھ ان کے پاس آتی ہیں تو وہ ان جماعتوں کے اتحاد کو حکومت بنانے کیلئے مدعو کریں گے۔ جب وہ اور مسٹر سعید مل کر گورنر کے پاس گئے تو انہوں نے ہمیں ہی حکومت بنانے کیلئے بلایا تھا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں