رمضان جنگ بندی کا فیصلہ تاریخ ساز مختلف رہنمائوں نے خیرمقدم کیا

سرینگر/ماہ صیام میں جنگ بندی کے فیصلے کو تاریخ ساز قرار دیتے ہوے پی ڈی پی کے جنرل سیکریٹری سرتاج مدنی نے مرکزی وزارت داخلہ کے جنگ بندی سے متعلق فیصلے کے بارے میں کہا کہ اس سے کشمیر میں تشدد کا خاتمہ کرنے میں مدد مل سکتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام نے بہت دکھ اور تکالیف اٹھاے ہیں اور اب ماہ مبارک میں جب تشدد کا سلسلہ بند ہوگا تو ریاستی حکومت کو اس بات کا موقعہ ملے گا کہ وہ عوام کی فلاح و بہبود کے بارے میں اقدامات اٹھاے جس سے لوگوں کو راحت بھی مل سکتی ہے ۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ سلسلہ اس سے آگے بھی بڑھ جاے گا تاکہ کشمیری عوام نوجوانوں کے اندر پائی جانے والی بیچینی ختم کرنے میں مدد مل سکتی ہے ادھر پی ڈی پی ضلع سرینگر کے صدر محمد خورشید عالم نے بھی مرکز کے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے انہوں نے کہا کہ مرکز کا یہ فیصلہ محبوبہ مفتی کی بھر پور کوششوں کا نتیجہ ہے جس سے عوام کو تشدد سے نجات مل سکتی ہے، ادھر حکمران جماعت پی ڈی پی نے ’رمضان جنگ بندی ‘ کے فیصلے کو تاریخ ساز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مرکز کا غیر معمولی فیصلہ اعتماد سازی کے حوالے سے اہم تبدیلی کا غماز ہے ۔پارٹی کے ترجما ن اعلیٰ رفیع احمد میر نے کہا کہ مرکزی حکومت کے اس اہم اقدام سے وادی کشمیر میں قیام امن کیلئے راہ ہموار ہوگی پی ڈی پی کے ترجمان ِ اعلیٰ محمد رفیع احمد میر نے کہا کہ رمضان جنگ بندی کا اعلان خوش آئندہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ مرکزکے اس غیر معمولی فیصلہ اعتماد سازی  /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
کے حوالے سے ایک بڑی پیش رفت ہے جبکہ یہ اہم اور تاریخ ساز فیصلہ اعتماد سازی کا بڑا ’چینج میکر‘ ہے ۔ان کا کہناتھا کہ یہ تاریخ ساز فیصلہ ہے اور یہ فیصلہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے سیاسی نظریہ اور مضبوطی کی توثیق ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی کائوشوں سے مرکزی حکومت نے اتنا بڑا اعلان کیا ۔انہوں نے کہا کہ مرکز کے اس غیر معمولی اقدام اور فیصلے سے وادی کشمیر میں قیام امن کے حوالے سے راہ ہموار ہوگی ۔ان کا کہناتھا کہ پی ڈی پی جموں وکشمیر کے سیاسی مسئلے کے حل کے حوالے سے وعدہ بند ہے اور پی ڈی پی کا ماننا ہے کہ سیاسی مسئلے کا حل مفاہمت اور امن مذاکرات سے ہی نکالا جاسکتا ہے ۔محمد رفیع میر نے کہا کہ مرکز کا یہ فیصلہ ریاستی عوام کے مفاد میں ہے جبکہ وادی میں قیام امن کے حوالے سے ایک نئی امید کی کرن بھی ہے ۔انہوں نے مرکزی حکومت کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ رمضان سیز فائر سے ایک نئی امید پیدا ہوگی ہے ۔انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ جنگ بندی کا احترام ہو گا تاکہ قیام امن کو ایک موقع مل سکے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں