کیرن سیکٹر میں خونریز معرکہ آرائی ، 6جنگجو جاں بحق دراندازی کی کوشش کے دوران فریقین کے درمیان کئی گھنٹے تک گولیوں کا تبادلہ، وسیع علاقے کا محاصرہ ، تلاشی مہم جاری

شمالی کشمیر/محسن کشمیری / عابدنبی / کے این ایس /یو پی آئی /مرکزی سرکار کی جانب سے جنگ بندی میں مزید 2ماہ کی توسیع کی چہ مگوئیوں کے بیچ شمالی کشمیر کے سرحدی ضلع کپوارہ میں لائن آف کنٹرول کے کیرن سیکٹر میں فوج نے دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے 6مسلح دراندازوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔فوج کے مطابق خونین تصادم آرائی کے دوران مائے گئے جنگجو غیر ملکی معلوم ہوتے ہیں جبکہ فوج نے علاقے کا گھیرائو تنگ کرکے جنگلاتی خطہ میں مزید جنگجوئوں کو ڈھونڈ نکالنے کے لیے وسیع پیمانے پر تلاشی آپریشن شروع کردیا۔ شمالی کشمیر کے سرحدی ضلع کپوارہ میں لائن آف کنٹرول کے کیرن سیکٹر میں فوج اور جنگجوئوں کے مابین خونین گھماسان اُس وقت شروع ہوا جب اتوار علی الصبح جنگجوئوں کے ایک گروپ نے اس پار دراندازی کرنے کی کوشش کی۔ فوجی ترجمان نے بتایا کہ اتوار علی الصبح جنگجوئوں کے ایک گروپ نے کیرن سیکٹر میں لائن آف کنٹرول عبور کرکے اس پار داخل ہونے کی کوشش کی۔ انہوں نے بتایا کہ موقعہ پر موجود فوجی اہلکاروں نے اگر چہ جنگجوئوں کو ہتھیار ڈالنے کی پیش کش کی لیکن جنگجوئوں نے خود کار ہتھیاروں سے فوج پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے درمیان گولیوں کا شدید تبادلہ ہو اجو کئی گھنٹوں تک جاری رہا۔ اس دوران جنگجوئوں نے جنگلاتی علاقوں میں پناہ لینے کی کوشش کرتے ہوئے فوج پر وقفے وقفے سے گولی باری کی جس کا فوجی اہلکاروں نے پوری قوت کے ساتھ جواب دیا۔ ترجمان نے بتایا کہ اس دوران فوج کی اضافی کمک جائے موقعہ پر طلب کی گئی جنہوں نے وسیع علاقے کو سیل کرتے ہوئے بھاگنے کے تمام ممکنہ راستوں /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 کو سیل کردیا اور جھاڑیوں میں چھپے بیٹھے جنگجوئوں کو ڈھونڈ نکالنے کے لیے بڑے پیمانے پر تلاشی کارروائی کا آغاز کردیا۔ انہوں نے کہا کہ اس دوران سرحد سے متصل جنگلاتی اراضی میں تلاشی کارروائی کے دوران 6عدم شناخت جنگجوئوں کی نعشوں کو برآمد کیا گیا جو سبھی غیر ملکی معلوم ہوتے ہیں۔ اس سلسلے میں فوج کی چنار کارپس نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکائونٹ پر واقعہ سے متعلق جانکاری فراہم کرتے ہوئے لکھا کہ ’ فوج نے سرحدی ضلع کپوارہ کے کیرن سیکٹر میں دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بنادیا جس میں 6جنگجوئوں کو ہلاک کیا گیا جو سبھی غیر ملکی معلوم ہوتے ہیں‘۔فوج نے مزید کہا کہ علاقہ بھر میں ابھی جنگجو مخالف آپریشن جاری ہے۔ اس سلسلے میں فوج کے ترجمان راجیش کالیا نے بتایا کہ کپوارہ میں ایل او سی کے کیرن سیکٹر میں تعینات بھارتی فوج کے اہلکاروں نے سنیچر رات دیر گئے جنگجوئوں کے ایک گروپ کی نقل و حمل محسوس کی جنہوں نے اندھیرے کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے اس پار داخل ہونے کی کوشش کرنی چاہی۔ انہوں نے کہا اس موقعہ پر فوجی جوانوں نے دراندازوں کو خود سپردگی کرنے کی پیش کش کی جس کا دراندازوں نے مثبت جواب نہیں دیا۔ فوج کے ترجمان نے بتایا کہ اس موقعہ پر جنگجوئوں نے فوجی اہلکاروں پر خودکار ہتھیاروں سے فائرنگ شروع کی جس کا فوج نے بھر پور جواب دیا۔ انہوں نے بتایا کہ اس موقعہ پر طرفین کے مابین کئی گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا جس میں آخری اطلاعات ملنے تک 6جنگجوئوں کو ہلاک کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ فوج نے مزید جنگجوئوں کو مزید ڈھونڈ نکالنے کی خاطر علاقے کا وسیع پیمانے پر محاصرہ عمل میں لایا ہے ۔یاد رہے مرکزی سرکار کی جانب سے یک طرفہ جنگ بندی کے بیچ شمالی کشمیر کے سرحدی ضلع کپوارہ میں گزشتہ دو ہفتوں کے دوران دراندازی کی تین کوششوں کو ناکام بنایا گیا ہے جن میں فوج کے مطابق 10جنگجوئوں کو جاں بحق کیا گیا۔ فوجی ذرائع نے بتایا کہ شمالی کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے دوسری طرف پاکستان زیرانتظام کشمیر میں جنگجوئوں کے متعدد گروپ سرحد کے اس پار دراندازی کرنے کی تاک میں بیٹھے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں