بانڈی پورہ میں جنگجو ئوں کیخلاف آپریشن جاری گولیوں کے تبادلے میں 2/ فوجی اہلکار زخمی

بانڈی پورہ/عازم جان / کے این این /بانڈی پورہ میں 3روز سے جاری وسیع پیمانے پر جنگجومخالف آپریشن کے دوران پانار جنگلات میں طرفین کے مابین تازہ شدید گولیوں کے تبادلے میں2فوجی اہلکار زخمی ہوئے ۔جنگلات میں موجود جنگجوئوں کو ڈھونڈ نکالنے/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 کیلئے مزید فوجی کمک طلب کی گئی ۔ 26مئی سے 11جون تک شمالی کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے نزدیک کپوارہ ضلعے کے گھنے جنگلات میں جنگجوئوں اور فوج کے درمیان خونین معرکہ آرائیوں میں 16جنگجو اور ایک فوجی اہلکار لقمہ اجل بن گئے جبکہ متعدد اہلکاروں زخمی بھی ہوئے ۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پانار بانڈی پورہ میں مشکوک نقل وحرکت دیکھنے کے بعد فوج نے بڑے پیمانے پر یہاں جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا ۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ فوج کو ایک اطلاع ملی کہ علاقے میں جدید ہتھیاروں سے لیس جنگجوئوں کا ایک گروہ موجود ہے اور اطلاع ملتے ہی فوج نے علاقے کا محاصرہ کیا اور جنگجوئوں کی تلاش شروع کردی ۔ذرائع نے بتایا کہ سنیچر وارکی شب سے باندی پورہ میں یہ آپریشن جاری ،جس میں طرفین کے مابین ہوئے گولیوں کے تبادلے میں 2فوجی اہلکار زخمی ہوئے ۔ذرائع نے بتایا کہ پانار بانڈی پورہ کے گائوں میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران فوج اور جنگجو ئوں کے درمیان آمنا سامنا ہوا ،جس دوران جنگجوئوں نے تلاشی کارروائی پر مامور اہلکاروں پر فائرنگ کی ۔معلوم ہوا ہے کہ فوجی نے بھی جوابی کارروائی میں فائرنگ کی جسکی ساتھ ہی طرفین کے مابین شدید گولیوں کا تبادلہ شروع ہوا ۔ذرائع نے بتایا کہ جنگجوئوں اور فوج کے درمیان گولیوں کے تبادلے کے دوران فوج کے2اہلکار گولی لگنے سے زخمی ہوئے ،جنہیں علاج ومعالجہ کی فوجی اسپتال منتقل کیا گیا ۔ذرائع کے مطابق پیر کی صبح سے جنگجوئوں اور فوج کے درمیان جنگلی علاقے میں شدید نوعیت کی جھڑپ جاری ہے جبکہ یہاں موجود جنگجوئوں پر قابو پانے کیلئے جنگلی علاقے کے داخلی اور خارجی راستوں کو مکمل طور پر سیل کردیا جبکہ آپریشن کیلئے مزید فوجی کمک طلب کی ۔ذرائع نے بتایا کہ وسیع اور گھنے جنگلات میں جنگجوئوں نے پناہ لی ،جنہیں ڈھونڈ نکالنے کیلئے فوج نے وسیع پیمانے پر تلاشی کارروائی شروع کی جبکہ تادم تحریر علاقے میں جنگجو مخالف آپریشن جا ری تھا ،جس میں14آر آر کے2اہلکار زخمی ہوئے ۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ شمالی کشمیر میں 26مئی سے 11جون تک جنگجوئوں اور فوج کے درمیان خونین معرکہ آرائیوں میں 16جنگجو اور ایک فوجی لقمہ اجل بن گئے۔26مئی کو فوج نے سرحدی ضلع کپوارہ کے ٹنگڈار سیکٹر میں حد متارکہ پر در اندازی کی ایک بڑی کوشش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا تھا ۔دفاعی ترجمان کا کہنا تھا کہ در اندازی کی کوشش کے دوران فوج اور در اندازوں کے مابین ہفتہ کی علی الصبح جھڑپ ہوئی ،جس دوران5عدم شناخت در انداز جاں بحق ہوئے ۔31مئی کوفوج نے دعویٰ کیا تھا کہ قاضی آباد ہندوارہ کے جنگلات میں شبانہ معرکہ آرائی کے دوران 2عدم شناخت جنگجو جاں بحق ہوئے۔6جون کو وزیر داخلہ کے دورہ کشمیر سے قبل فوج نے سرحدی ضلع کپوارہ میں تیسری در اندازی کی کوشش کو ناکام بنا نے کا دعویٰ کیا تھا ۔دفاعی ترجمان کے مطابق مژھل سیکٹر میں در اندازی کی کوشش کے دوران فوج اور در اندازوں کے مابین بدھ کی علی الصبح جھڑپ ہوئی ،جس دوران3عدم شناخت در انداز جاں بحق ہوئے جبکہ علاقے میں جنگجومخالف آپریشن ہنوز جاری ہے ۔7جون کو سرحدی ضلع کپوارہ میں تین سیکٹروں میں تین در اندازی کی کوششوں کے بیچ کیرن سیکٹر میں حد متارکہ کے نزدیک جنگجوئوں نے فوج پر حملہ کیا جسکے نتیجے میں ایک فوجی اہلکار کی موت ہوگئی جبکہ ایک اہلکار زخمی ہوا ۔10جون شمالی کشمیرمیں 2ہفتوں کے دوران دراندازی کی چوتھی بڑی کوشش کوناکام بنانے کادعویٰ کرتے ہوئے فوج نے کہاتھاکہ کیرن سیکٹرمیں حدمتارکہ کے نزدیک اتوارکوعل الصبح خونین معرکہ آرائی میں 6جنگجوجاں بحق ہوگئے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں