جنگجوئوں کا اب کنٹرول لائن کوعبورکرناممکن نہیں حالیہ کوششوں کی ناکامی سخت چوکسی اورموثرحکمت عملی کانتیجہ:بریگیڈئروی ایس چوہان

کپوارہ / محسن کشمیری / عابد نبی / کے این این /فوج نے’’دراندازی مخالف حکمت عملی کوکثیرالجہتی‘‘قراردیتے ہوئے دعویٰ کاہے کہ جنگجوئوں کیلئے اب حدمتارکہ کوعبورکرناممکن نہیں ہے۔فوج کی268ویں انفنٹری بریگیڈ کے کمانڈربریگیڈئروی ایس چوہان نے دراندازی کی کوششوں میں پاکستانی فوج کے ملوث ہونے کادعویٰ کرتے ہوئے کہاکہ ہمسایہ ملک کی فورسزکی منشائ اورایمائ پرہی جنگجواسپارداخل ہونے کی منصوبہ بندی کرتے ہیں ۔ فر کین ٹاپ کیرن سیکٹر میں واقع انفنٹری /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
بریگیڈ کیمپ میںایک پریس بریفنگ کے دوران 268ویں انفنٹری بریگیڈ کے کمانڈربریگیڈئروی ایس چوہان اتوار کے روز در اندازی اور جھڑپ کے حوالے سے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ کیرن سیکٹر میں یہ اس سیزن کی پہلی در اندازی کی کوشش تھی ،جسے بروقت ناکام بنادیا اور جدید اسلحے سے لیس 6پاکستانی جنگجوئوں کو جاں بحق کردیا ۔انہوں نے کہا کہ در اندازی مخالف بہترین حکمت عملی اور چوکسی کے باعث جنگجوئوں اپنی کوششوں میں کامیاب نہیں رہے ۔انہوں نے کہا کہ فوج حد متارکہ پر کسی بھی طرح کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ۔268ویں انفنٹری بریگیڈ کے کمانڈربریگیڈئروی ایس چوہان نے کہا ‘فوج برف پگھلنے سے پہلے اور بعد میں در اندازی یا دیگر چیلنجز سے نمٹنے کیلئے پوری طرح سے تیار ہے ‘۔انہوں نے کہا کہ کیرن سیکٹر میں جنگجوئوں کی در اندازی کوچوکسی کے نتیجے میں ناکام بنادیا ۔انہوں نے در اندازی کے حوالے سے بتایا ک یہ در اندازی ایک ایسے علاقے سے ہورہی تھی ،جہاں پاکستانی فوج کی2چوکیاں ہیں ۔ان کا کہناتھا کہ اس سے یہ صاف ظاہر ہوتا ہے کہ سر حد کے اُس پار سے اِس پار جنگجوئوں کو دھکیلنے کیلئے پاکستانی فوج تعائون کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ جنگ بندی معاہدے کے باوجود پاکستانی فوج کی جانب سے بار بار سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی ہورہی ہے ،جس کا واحد مقصد جنگجوئوں کو اِس پار دھکیلنے ہے کہ کشمیر میں قیام امن میں رخنہ ڈالا جاسکے ۔ان کا کہناتھا کہ جنگجوئوں کی ایک بڑی تعداد اب بھی پاکستانی زیر انتظام کشمیر میں قائم لانچنگ پیڈوں پر در ااندازی کی تاک میں ہے ۔انہوں نے کہا جھڑپ کے دوں جاں بحق ہوئے جنگجو ئوں فدائین تھے اور ان کا تعلق جیش محمد نامی عسکری تنظیم تھا ،اسکی تحقیقات کی جارہی ہے ۔ایک اور سوال کے جواب میںکمانڈربریگیڈئر وی ایس چوہان اُنہیں یہ اطلاع نہیں ہے کہ اُس جنگجوئوں کی تعداد کتنی ہے ،جو اس پار داخل ہونے کی تاک میں بیٹھے ہیں ۔انہوںنے کہاکہ جنگجوئوں کی دراندازی کوششوں کاتوڑکرنے کیلئے شمالی کشمیرمیں لائن آف کنٹرول کے نزدیک تین دائروں والاسیکورٹی حصارقائم کیاگیاہے ۔انہوں نے دراندازی کی کوششوں میں پاکستانی فوج کے ملوث ہونے کادعویٰ کرتے ہوئے کہاکہ ہمسایہ ملک کی فورسزکی منشائ اورایمائ پرہی جنگجواسپارداخل ہونے کی منصوبہ بندی کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز در اندازی کے دوران6جنگجو جاں بحق کردئے گئے ۔انہوں نے کہا کہ یہ کارروائی ایک خفیہ اطلاع ملنے کی بنیاد پر عمل میں لائی گئی ۔ان کا کہناتھا کہ اُنہیں ایک خفیہ اطلاع ملی تھی ،کہ جدید اور خود کار ہتھیاروں سے لیس جنگجوئوں کی ایک گروہ اس پار داخل ہونے کی کوشش کررہا ہے ،جسکے بعد فوری طور پر کارروائی عمل میں لائی گئی اور در اندازی مخالف کارروائی کے دوران6پاکستانی جنگجو جاں بحق ہوئے ۔دریں اثنائ نامہ نگاروں کو جاں بحق جنگجوئوں کی نعشیں بھی دکھائی گئیں ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں