نواز شریف معاملے کی شنوائی ایک ماہ میں مکمل کرنے کی سپریم کورٹ کی ہدایت

اسلام آباد، 11 جون ﴿یواین آئی﴾ پاکستان کی سپریم کورٹ نے نیشنل اکاؤنٹی بیلیٹی عدالت کو معزول وزیراعظم نواز شریف اور ان کے خاندان کے خلاف بدعنوانی سے متعلق معاملوں کی شنوائی ایک مہینہ میں مکمل کرنے کے احکام جاری کئے ۔ چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار کی سربراہی والی دو رکنی بنچ نے اتوار کو یہ حکم جاری کیا۔ عدالت نے مسٹر شریف اور ان کی بیٹی مریم کو لندن جانے کی بھی اجازت دے دی ہے جہاں محترمہ کلثوم نواز شریف کا علاج چل رہا ہے ۔ سپریم کوڑٹ نے گزشتہ برس مسٹرنواز شریف کو وزیراعظم کے عہدے کے لئے نااہل قرار دیا تھا۔ اس کے بعد ستمبر میں احتساب عدالت میں مسٹر شریف اور ان کے خاندان کے دیگر افراد کے خلاف مقدمہ دائر کیا گیا تھا۔ عدالت نے معاملے کی شنوائی پوری کرنے کے لئے چھ ماہ کی مدت طے کی تھی لیکن یہ مدت مارچ میں دو مہینہ اور مئی میں ایک ماہ کے لئے بڑھا دی گئی، جس کی مدت بھی اتوار کو ختم ہوگئی۔ بہر حال عدالت نے شنوائی پوری کرنے کے لئے اور وقت دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ پاکستان کے انگریزی اخبار 'ڈان' نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ سپریم کوڑٹ نے شنوائی پوری کئے جانے سے متعلق چھ ہفتے کا وقت دیئے جانے کے مسٹر شریف کے وکیل خواجہ حارث کی عرضی خارج کردی اور ایک ماہ کے اندر آخری فیصلہ سنائے جانے کا حکم جاری کردیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں