شوپیان میں ڈورن کے استعمال پر نوجوان مشتعل فوج پر سنگباری ، مظاہرین کو مشتعل کرنے کیلئے ہوائی فائرنگ

سرینگر/نیازحسین / کے این این /جنوبی ضلع شوپیان میںاُس وقت تشدد بھڑک اٹھا جب ڈی کے پورہ گائوں میں فوج نے یہاں اچانک نمودار ہوکر ڈرون طیارے کا استعمال کیا ۔اس موقع پر نوجوانوں نے جمع ہو کر فوجی اہلکاروں پر خشت باری کی ،جوابی کارروائی میں مشتعل احتجاجی مظاہرین کو تتربتر کرنے کیلئے ہوامیں گولیوں کے کئی رائونڈ چلائے ،تاہم اس میں کوئی نقصان نہیں ہوا ۔ ڈی کے پورہ شوپیان جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
میں مشتعل نوجوانوں نے فوجی اہلکاروں پر پتھرائو کیا ،جوابی کارروائی میں فوج نے ہوائی فائرنگ کی ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ منگل کی دوپہر ساڑھے12بجے کے قریب گائوں میں اچانک فوجی اہلکار نمودار ہوئے ،جنہوں نے غالباً جنگجوئوں کو تلاش کرنے کی غرض سے ڈرون طیارے کا استعمال کیا ۔معلوم ہوا ہے کہ گائوں میں جونہی یہ خبر پھیلی کہ فوج گائوں میں ڈرون طیاروں کا استعمال کررہی ہے ،تو نوجوانوں کی ٹولیاں نمودار ہوئیں اور مشتعل ہو کر فوج پر پتھرائو کیا ۔فوج نے جوابی کارروائی میں مشتعل نوجوانوں کو تتربتر کرنے کیلئے ہوا میں گولیوں کے کئی رائونڈ چلائے ،تاہم اس واقعے میں کوئی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ فوجی اہلکار علاقے میں بھارت مخالف وال چاکنگ کو مٹا رہے تھے ،جس دوران اُن پر شدیدپتھرائو کیا گیا ۔معلوم ہوا ہے کہ فوج بعد ازاں گائوں سے نکل گئی اور کچھ دیر تک یہاں افراتفری کے بعد صورتحال معمول پر آگئی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں