پولیس اہلکاروں پر جاں لیوا حملے کی کوئی جوازیت نہیں ہلاکت میں ملوث افراد کو عبرتناک سزا ملے گی /عمر عبداللہ

سر ینگر12جون/ اے پی آ ئی/پلوامہ میں دو پولیس اہلکاروں کی ہلاکت اور اننت ناگ میں 6اہلکاروں کے زخمی ہونے کے واقعات پر نیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر نے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دو پولیس اہلکاروں پر حملے کی کوئی جوازیت نہیں تھی اور پولیس اہلکاروں کی جانین لینے والوں کو عبرتناک سزا ضرور ملے گی ۔ جنگ بندی کی مدت ختم ہونے سے پہلے اگر پولیس و فورسز عسکریت پسندوں پر حملے کریںگے تو ان پر الزام لگایا جائیگا کہ انہوںنے وعدے کو توڑ دیا ،حالانکہ پولیس و فورسز کو یہ اختیار ہے کہ اگر ان پر حملہ کیا جائے تو وہ جوابی کارروائی کر سکتے ہیں ۔ اے پی آئی کے مطابق شب قدر کی رات کو کوٹ کمپلیکس پلوامہ کی حفاظت پر معمور دو پولیس اہلکاروں کی جانیں لینے اور اننت ناگ میں چھ سی آر پی ایف اہلکاروں کے زخمی ہونے کے واقعات پر نیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر او ر ریاست کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر جنگ بندی اعلان کی مدت ختم ہونے سے پہلے پولیس و فورسز عسکریت پسندوں پر حملہ کرتے تو پولیس و فورسز پر ضرور یہ الزام لگ جاتا کہ انہوںنے اپنے ہی وعدے کو پاؤں تلے روند ھ ڈالا جبکہ عسکریت پسندوںنے جنگ بندی کے اعلان کے بعد وادی کے کئی علاقوں میں پولیس و فورسز کے خلاف حملے بھی کئے اور کارروائیاں بھی عمل میں لائیں ۔ شب قدر کو فضیلت کی رات قرار دیتے ہوئے انہوںنے کہا کہ دو پولیس اہلکاروں پر حملے کی کوئی جوازیت نہیں تھی اور ان پولیس جوانوں کو موت کے گھاٹ اتارنے والوں کو عبرتناک سزا ملے گی جب وہ اپنے آپ کو دوزق میں پائے گے تو انہیں بچانے والا کوئی نہیں ہو گی ۔ نیشنل کانفرنس کے کارگزا ر صدر نے مارے گئے پولیس اہلکاروں کے لواحقین کے ساتھ تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ میں ان کے غم میں برابر کا شریک ہو۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں