رام گڈھ سیکٹر میں 4فوجی ہلاک سرحد پر شدید گولہ باری ، ایک شہری بھی جاں بحق اسلام آباد میں تعینات بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفتر خارجہ پر طلبی

سرینگر/ کے این ایس /سرحدوں پر کچھ روز تک خاموشی کے بعدہندو پاک افواج کے درمیان ضلع سانبہ کے رام گڑھ سیکٹر میںآتشی گولہ باری کا تبادلہ ہوا جسکے نتیجے میں بی ایس ایف کے 3افسران سمیت4اہلکارہلاک ہو ئے جن میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ بھی شامل ہے، جبکہ دیگر5اہلکار زخمی ہو ئے جنہیں علاج و معالجہ کے لئے ستواری کے فوجی اسپتال منتقل کیا گیا ۔ادھر پاکستان نے بھارت پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عائد کرتے ہو ئے کہا کہ بھارت کی جانب سے تازہ گولہ باری کے نتیجے میں چری کوٹ سیکٹر میں ایک شہری جاں بحق ہوا اور اس حوالے سے اسلام آباد میں تعینات بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفتر خارجہ طلبی کے بعد انہیں احتجاجی مراسلہ بھی سو نپا گیا ۔اس دوران ریاستی پولیس کے سر براہ ڈاکٹرایس پی وید نے سانبہ سیکٹر میں گولہ باری کی تصدیق کرتے ہو ئے بتایا کہ پاکستانی گولہ باریی کے نتیجے میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ سمیت بی ایس ایف کے 4اہلکار ازجان ہو ئے جبکہ دیگر 5زخمی ہو ئے ۔ لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحدوں پر کئی روز تک خاموشی کے بعد ہندو پاک افواج نے ایک بار پھر جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہو ئے ایک دوسرے کی چو کیوں کو نشانہ بنانے کی غرض /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 سے آتشی گولہ باری کا تبادلہ کیا جس کے نتیجے میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ سمیت بی ایس ایف کے 4افسران لقمہ اجل بن گئے جبکہ مو رٹار گولوں کے ریزے لگنے کے نتیجے میں دیگر 5بی ایس ایف اہلکار زخمی ہو ئے جنہیں علاج و معالجہ کے لئے ستواری جموں کے فوجی اسپتال منتقل کیا گیا ۔دفاعی زرائع نے بتایا کہ پاکستانی فوج کی جانب سے بدھوار کو علیٰ الصبح سانبہ کے رام گڑھ سیکٹر میں بابا چملیال کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ اور دیگر 2افسران سمیت بی ایس ایف کے4اہلکار ہلاک ہو ئے جب کہ مو رٹار گولوں کے آہنی ریزے لگنے کے نتیجے میں 5بی ایس ایف اہلکار زخمی ہو ئے ۔اس دوران ریاستی پولیس کے سر براہ سہیش پال وید نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹویٹر پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہو ئے سانبہ کے رام گڑھ سیکٹر میں پاکستانی گولہ باری کی تصدیق کرتے ہو ئے بتایا کہ اس میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ سمیت بی ایس ایف کے چار جون لقمہ اجل بن گئے جبکہ 5دیگر زخمی ہو ئے ۔ڈی جی پی نے اس دوران مہلوک بی ایس ایف اہلکاروں کے رشتہ داروں اور اہلخانہ کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار بھی کیا ۔اس دوران بی ایس ایف ذرائع نے بتایا کہ پاکستان کی جانب سے گذشتہ رات رام گڑھ سیکٹر میں بھارتی فوج کی چوکیوں کو نشانہ بناکر بلااشتعال گولہ باری شروع کی گئی۔ انہوں نے بتایا پاکستان کی طرف سے مارٹر گولے داغے گئے جس کے نتیجے میںبی ایس ایف کے چار جوان لقمہ اجل بن گئے۔ بی ایس ایف زرائع نے بتایا کہ مہلوک اہلکاروں میں ایک اسسٹنٹ کمانڈنٹ رینک کا افسر بھی شامل جبکہ پاکستانی گولہ باری کے نتیجے میں بی ایس ایف کے مزید 5 اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔بی ایس ایف کی جانب سے مہلوک افسران کی شناخت سب انسپکٹر راجیش کمار ،اے ایس آئی رام نواس ،اے ایس ائی جتیندر سنگھ اور سپاہی ہنس راج شامل ہیں ۔۔ادھر پاکستانی دفتر خارجہ کے تر جمان کے مطابق لائن آف کنٹرول پربھارت کی جانب سے کی گئی بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں شہری کی موت واقع ہوئی ہے ۔پاکستانی میڈیا رپورٹس کے مطابق اسلام آباد میں تعینات بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو طلب کرکے احتجاج کیا گیاجبکہ اس مو قعے پر بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو احتجاجی مراسلہ بھی دیا گیا جس میں شہری کی ہلاکت پر احتجاج کیا گیا ہے۔پاکستانی ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق گزشتہ روز 12 جون کو بھارتی فورسز کی جانب سے ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی جس کے نتیجے میں چری کوٹ سیکٹر میں شہری محمد شکیل جاں بحق ہوگیا تھا۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق رواں برس بھارتی فائرنگ سے اب تک 29 شہری جاں بحق اور 117 زخمی ہوچکے ہیں۔یاد رہے کہ ہندو پاک ڈائریکٹر جنرل آپریشنز ﴿ڈی جی ایم اوز﴾ نے 29 مئی کو ہاٹ لائن پر بات چیت کی جس کے دوران دونوں ممالک کے درمیان جنگ بندی معاہدے پر مکمل طور اتفاق کر نے کی ایک دو سرے کو یقین دہانی کرائی تھی تاہم یہ یقین دہانیاں بھی بے سود ثابت ہو ئی اورتازہ گولہ باری کے نتجے میں آر پار ایک شہری اور 4بی ایس ایف اہلکاروں سمیت 5افراد ازجان ہو ئے ،جبکہ اس آتشی گولہ باری کی نتیجے میںسرحدی آبادی میں خوف و ہراس کی لہر دوڈ گئی ہے ۔اس دوران معلوم ہوا ہے کے رواں برس کے دوران لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر پاکستانی گولہ باری کے نتیجے میں بی ایس ایف کے 11اہلکار ہلاک ہو ئے ہیں جو کہ گزشتہ 5برسوں میں سب سے زیادہ تعداد ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں