کپوارہ میں برفانی تودے کی زد میں آکر لاپتہ ہونے والے فوجی کی لاش 6 ماہ بعد برآمد

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾ شمالی کشمیر کے ضلع کپوارہ میں لائن آف کنٹرول ﴿ایل او سی﴾ کے نوگام سیکٹر میں 11 دسمبر 2017 کو برفانی تودے کی زد میں آنے کے بعد لاپتہ ہونے والے ایک فوجی اہلکار کی لاش 6 ماہ بعد برآمد کی گئی ہے۔ مہلوک فوجی کی شناخت سپاہی شامی سنگھ کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ ایک فوجی عہدیدار نے بتایا کہ 11 دسمبر 2017 کو ناگام سیکٹر میں برفانی تودہ گرنے کا واقعہ پیش آیا اور سپاہی شامی سنگھ اور سپاہی کوشل سنگھ اس کی زد میں آکر لاپتہ ہوئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ کوشل سنگھ کی لاش کچھ ہی دن بعد 16 دسمبر کو برآمد ہوئی تھی لیکن شامی سنگھ بدستور لاپتہ تھے۔ انہوں نے بتایا ’شامی سنگھ کی تلاش کئی روز تک جاری رکھی گئی تھی۔ لیکن اس کا پتہ لگانے میں ناکامی کے بعد آپریشن کو ختم کرنے کا اعلان کیا گیا تھا‘۔ مذکورہ فوجی عہدیدار نے بتایا ’چونکہ موسم گرما کے دن شروع ہونے کے ساتھ ہی برف کافی حد تک پگھل گئی، اس کو دیکھتے ہوئے سپاہی شامی سنگھ کی لاش کو تلاش کرنے کا آپریشن گذشتہ روز بحال کیا گیا اور بالآخر 13 جون کو لاش برآمد کی گئی‘۔ اس دوران دفاعی ترجمان نے کہا کہ شمالی کمان کے جی او سی لیفٹیننٹ جنرل رنبیر سنگھ اور دوسرے فوجی افسروں نے سپاہی شامی سنگھ کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اس کے لواحقین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں