دھونی اور وراٹ کے پاس 10 ہزاری بننے کا موقع

نئی دہلی/یو این آئی/ ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی اور سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کے پاس انگلینڈ کے خلاف 12 جولائی سے شروع ہو رہی تین میچوں کی ون ڈے سیریز میں 10 ہزاری بننے کا موقع رہے گا۔29 سالہ وراٹ 208 میچوں میں 58.10 کی متاثر اوسط سے 9588 رنز بنا چکے ہیں اور انہیں 10 ہزار رنز تک پہنچنے کے لیے 402 رنز کی ضرورت ہے جو کہ ایک مشکل چیلنج ہے لیکن وراٹ ایسا کرنے کے اہل ہیں ۔ وراٹ اب تک 35 سنچری کے ساتھ ون ڈے میچوں میں سب سے زیادہ سنچری بنانے کے معاملے میں سچن تندولکر کے بعد دوسرے نمبر پر ہیں۔سابق کپتان اور وکٹ کیپر دھونی 318 میچوں میں 51.37 کی اوسط سے 9967 رنز بنا چکے ہیں اور انہیں 10 ہزار رنز کیلئے 33 رنز کی ضرورت ہے ۔دھونی کے کھاتے میں 10 سنچری اور 67 نصف سنچری ہیں۔وہ اس کے علاوہ ون ڈے میچوں میں 300 کیچوں کا ہندسہ بھی مکمل کر سکتے ہیں۔وہ اب تک وکٹ کے پیچھے 297 کیچ لپک چکے ہیں۔ون ڈے میچوں میں اب تک دنیا کے 11 کھلاڑیوں نے 10 ہزار رن پورے کئے ہیں۔سچن تندولکر 18426 کے ساتھ نمبر ایک بلے باز ہیں۔ہندستان کی جانب سے سورو گنگولی 11363 اور راہل دراوڑ 10889 رنز کے ساتھ 10 ہزاری بننے والے دو دیگر بلے باز ہیں۔ دھونی اس کلب میں شامل ہونے والے ہندستان کے چوتھے اور دنیا کے 12 ویں بلے باز بن سکتے ہیں۔
وراٹ کے پاس ٹیسٹ، ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 تینوں فارمیٹ کو ملا کر سب سے زیادہ رن بنانے میں سابق اوپنر وریندر سہواگ کو بھی پیچھے چھوڑنے کا موقع رہے گا۔وراٹ تینوں فارمیٹ میں کل 17244 رنز بنا چکے ہیں اور سہواگ کے کھاتے میں 17253 رنز ہیں۔ وراٹ کو سہواگ سے آگے نکلنے کے لئے صرف 10 رنز کی ضرورت ہے اور اس کے ساتھ ہی وہ تینوں فارمیٹ میں سب سے زیادہ رن بنانے میں 20 ویں نمبر پر پہنچ جائیں گے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں