کولگام میں بندوق کی نوک پر 2افراد کا اغوا ایک کا قتل دوسرے کو زخمی حالت میں چھوڑ دیاگیا

سرینگر/ جے کے این ایس /کولگام میں بندوق کی نوک پر دو نوجوانوں کا اغوا کرنے کے بعد انہیں نیم مردہ حالت میں چھوڑا گیا اگر چہ دونوں کو اسپتال منتقل کیا گیا تاہم ایک زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ بیٹھا۔ پولیس ترجمان کے مطابق عسکریت پسندوں نے دو مقامی نوجوانوں کا اغوا کرنے کے بعد ایک کو بے دردی کے ساتھ قتل کیا۔ نامعلوم بندوق برداروں /جاری صفحہ نمبر۱۱پر
 نے گزشتہ روز کولگام اور کھڈونی علاقوں میں دو نوجوانوں کو بندوق کی نوک پر اغوا کرکے اپنے ساتھ لئے گئے۔ معلوم ہوا ہے کہ اغوا کئے گئے نوجوانوں کا شدید ٹارچر کرکے کل رات چھوڑ دیا گیا اگر چہ دونوں کو فوری طورپر نزدیکی اسپتال منتقل کیا گیا تاہم ڈاکٹروں نے عارف احمد نامی نوجوان کو مردہ قرار دیا۔ جونہی نوجوان کی نعش اُس کے آبائی گھر واقع کولگام پہنچائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے نوجوان کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور بعد میں اُس کو پُر نم آنکھوں کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا۔ پولیس ترجمان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق کولگام میں عسکریت پسندوںنے مقامی نوجوان کو اس قدر تشدد کا نشانہ بنایا کہ وہ دم توڑ بیٹھا۔ کل دو نوجوانوں جن کی شناخت معراج احمد ساکنہ کولگام اور عارف احمد ساکنہ کھڈونی کے بطور ہوئی ہے کا اغوا کیا گیا۔ عارف احمد کے جسم پر تشدد کے واضح نشانات موجود تھے اور اُس کو علاج ومعالجہ کی خاطر فوری طورپر اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ بیٹھا۔ کولگام پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں