سپریم کورٹ نے بی سی سی آئی کے آئین کے مسودے کو منظوری دی عدالت نے ساتھ ہی کرکٹ ایسوسی ایشنوںکو حکم دیا ہے کہ30دن کے اندر اندرکرکٹ بورڈکے آئین کا اطلاق کریں

نئی دہلی/یو این آئی/سپریم کورٹ نے لودھا پینل کے ذریعہ تیار کردہ آئین کے مسودے کو کچھ ترمیمات کے ساتھ منظور کرلیا ہے ۔ اس آئین میں ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن ، وردبھ اور ریلوے کو کچھ آئینی ترمیمات کے ساتھ مکمل ممبرشپ دی گئی ہے ۔سپریم کورٹ کے چیف جسٹس دیپک مشرا کی قیادت والی تین رکنی بنچ نے اپنے حکم کہا ہے کہ چار ہفتوں میں نئے آئین کو منظور کرلیا جائے ۔عدالت عظمی نے لودھا پینل کی ''ایک اسٹیٹ ایک ووٹ'' پالیسی کو مسترد کردیا اورسوراشٹر، ودودرا، ممبئی اور ودربھ کرکٹ ایسوسی ایشن کو ممبرشپ دے دی گئی۔ ملک کی عدالت عظمی نے ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ ﴿بی سی سی آئی﴾ اور ریاست کرکٹ ایسوسی ایشن کو بڑی راحت دیتے ہوئے جمعرات کو 'ایک ریاست ایک ووٹ ' کے اصول کو مسترد کر دیا، اس کے علاوہ لوڈھا کمیٹی کے ہندستانی بورڈ کے کیلئے بنائے گئے آئین کے مسودے کو بھی کچھ اصلاحات کے ساتھ اپنی منظوری دے دی۔سپریم کورٹ نے بی سی سی آئی میں آئینی اور بنیادی اصلاحات کے لیے لوڈھا کمیٹی تشکیل دی تھی جس نے عدالت کے سامنے اپنی سفارشات رکھی تھیں۔ چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بنچ نے بورڈ کے لیے تیار شدہ آئین کے مسودے کو کچھ تبدیلیوں کے ساتھ منظوری دے دی۔عدالت نے ساتھ ہی بی سی سی آئی کے ریاستی اراکین کو بڑی راحت دیتے ہوئے ایک ریاست ایک ووٹ کے قوانین کو منسوخ کر دیا ہے اور ممبئی، سوراشٹر، وڈودرا اور ودربھ کرکٹ ایسوسی ایشن کو مستقل رکنیت فراہم کر دی ہے ۔ چیف جسٹس نے تمل ناڈو سوسائٹی کے رجسٹرار جنرل کو چار ہفتوں کے اندر اندر نئے نظر ثانی بی سی سی آئی آئین مسودے کو ریکارڈ کرنے کے لئے ہدایات بھی دی ہیں۔بینچ میں جسٹس اے ایم کھانولکر اور ڈی وائی چندرچوڑ بھی شامل تھے ۔ انہوں نے ریلوے ، فوج اور یونیورسٹي کی مستقل رکنیت کو بھی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا جسے پہلے عدالت عظمی کی طرف سے قائم لوڈھا کمیٹی کی سفارش پر منسوخ کر دیا گیا تھا۔عدالت نے بی سی سی آئی کے عہدیداروں کے لیے 'کولنگ آف' یا دو وقفہ کار کے درمیان فرق کی مدت کے قوانین میں بھی تبدیلی کی ہیں۔ ترمیمی قوانین کے مطابق بورڈ کا کوئی اعلی عہدیدار اب ایک کی بجائے مسلسل دو مدت تک عہدے پر قائم رہ سکتا ہے ۔عدالت نے ساتھ ہی کرکٹ ایسوسی ایشن کو حکم دیا ہے کہ وہ 30 دن کے اندر اندر بی سی سی آئی کے آئین کا اطلاق کریں۔ اس کے لیے عدالت نے خود قائم منتظمین کی کمیٹی ﴿سی او اے ﴾ کو بھی ہدایت دی ہیں کہ وہ اس عمل کی نگرانی کرے ۔ ریاستی ایسوسی ایشنز کو قوانین کی خلاف ورزی کرنے کی پوزیشن میں سزا کے لئے بھی خبردار کیا گیا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں