جنگجو کی لاش کی توہین کرکے فوج نے خود کو پھر بے نقاب کیا ہے:انجینئر رشید مارا ماری کیلئے نئی دلی کو ذمہ دارٹھہرایا

 سرینگر 15ستمبر/سی این ایس/  عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ انجینئر رشید نے گلورہ میں شہید کئے گئے فرقان رشید لون کے گھر جاکر انکے لواحقین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا۔اس موقعہ پر انہوں نے آئے دنوں نوجوانوں کے مارے جانے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تنازعہ کشمیر کی وجہ سے مارے جانے والوں کی موت کیلئے نئی دلی ذمہ دار ہے جو نہ صرف متکبر اور ہٹ دھرم ہے بلکہ وقت وقت پر جموں کشمیر کے لوگوں کے ساتھ وقت وقت پر کئے جاتے رہے وعدوں کو پورا کرنے سے منکر بھی۔انہوں نے کہا کہ ریاست میں امن قائم کرنے کی تمناخود کشمیریوں کے علاوہ کسی اور کی نہیں ہو سکتی ہے تاہم جب تک نئی دلی مسئلہ کشمیر کواقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرنے کی چاہت نہ دکھائے کشمیریوں کیلئے صلح جوئی پر آمادہ ہونا مشکل ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کو امن کا سبق پڑھانے کی کوشش کرنے والے لاشوں تک کی تذلیل کر رہے ہیں۔انجینئر رشید نے کہا’’ریاستی کے ججر کوٹلی میں بھارتی فوج کے ایک جنگجو کو گھسیٹ کر لئے جانے کی تصویروں نے اخلاقی برتری اور نہ جانے کس کس چیز کا دعویٰ کرنے والی اس فوج کو پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کردیا ہے۔حالانکہ جب کوئی دشمن مارا جائے تو انسانیت کا اصول ہے کہ دشمنی بھی اسی کے ساتھ مر جاتی ہے لیکن جس طرح کا سلوک فوج نے ایک لاش کے ساتھ کیا ہے اسے کسی بھی طرح جواز فراہم نہیں کیا جا سکتا ہے یہاں تک کہ جنگل راج کہلائے جانے والی لاقانونیت بھی اس طرح کے سلوک کی اجازت نہیں دے سکتی ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں