انڈونیشیا میں زلزلہ سے مرنیوالوں کی تعداد بڑھ کر 1944ہوگئی،5000افرادلاپتہ

پالو﴿یواین آئی﴾ انڈونیشیا میں آئے زبردست زلزلے اور سونامی میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر پیر کو 1944ہو گئی جبکہ پانچ ہزار لوگ اب بھی لاپتہ ہیں جبکہ متاثرین کو تلاش کرنے کا کام مکمل ہو چکا ہے ۔عرب نیوز نے ایک مقامی فوجی ترجمان کے حوالہ سے یہ اطلاع دی۔ ریلیف اور راحت رضاکاروں نے پیر کو ہوٹل رووا-رووامیں تلاشی مہم کو ختم کردیا۔ گزشتہ 28ستمبر کو آئے 7.5شدت والے زلزلہ کے زوردار جھٹکوں اور سونامی کی وجہ سے پانچ ہزار لوگ اب بھی لاپتہ ہیں۔ پالو میں تلاشی اور ریلیف مہم کے فیلڈ ڈائرکٹر بمبانگ سوریو نے کہاہوٹل رووا-رووا میں تلاشی مہم ختم ہو گئی ہے کیونکہ ہم نے پورے ہوٹل تلاشی مہم چلائی ہے اور ابھی تک کوئی متاثڑ نہیں پائے گئے ہیں۔ جائے حادثہ پر موجود تلاشی مہم کے ایک اور اہلکار آگس ھاریانو نے کہا کہ ہوٹل سے 27لاشوں کو نکالا گیا ہے جن میں سے تین کو اتوار کو ملبے سے نکالا گیا۔ مرنے والوں میں پالو میں ایک مقابلے میں شامل ہونے آئے پانچ پ پیرا گلائڈر بھی شامل ہیں جن میں ایشیائی کھیلوں کا ایک کھلاڑی اور ایک جنوبی کوریائی کھلاڑی شامل ہے ۔ جنوبی کوریا کے کھلاڑی اس تباہی میں واحد نامعلوم غیر ملکی متاثر ہے ۔ حکومت نے کہا ہے کہ زلزلہ کی وجہ سے مسطح ہو چکے کچھ علاقوں کو اجتماعی قبر کے طور پر اعلان کیا جائے گا۔زلزلہ سے متاثر200,000لوگوں تک امدادی سامان پہنچانے کے لیے راحت کوششیں تیز کر دی گئی ہیں۔ کھانے اور صاف پینے کے پانی کی کم مقدار میں سپلائی کی جا رہی ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں