ٹرمپ نے جسٹس بریٹ کیوناگ کا دفاع کیا

واشنگٹن﴿یو این آئی﴾ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے سپریم کورٹ کے نئے جسٹس بریٹ کیوناگ پر لگنے والے جنسی استحصال کے الزامات کو پیر کے روز خارج کرتے ہوئے اسے دھوکے بازیباوٹیقرار دیا۔ری پبلکن صدر مسٹر ٹرمپ نے جج پر مواخذہ چلانے کے ڈیموکریٹک پارٹی کے مطالبے کو امریکی عوام کی بے عزتی قرار دیتے ہوئے اس کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔بی بی سی نیوز نے فلوریڈا روانہ ہونے سے قبل دیئے گئے مسٹر ٹرمپ کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اب میں سن رہا ہوں کہ اب وہ ﴿ڈیموکریٹ﴾ ممتاز ماہر قانون پر مواخذہ چلانے کے بارے میں سوچ رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایک شخص جس نے کچھ بھی غلط نہیں کیا، وہ شخص جو ڈیموکریٹ کے جام فریب میں ڈیموکریٹک کے وکیلوں کے ذریعہ پکڑا گیا اور اب وہ اس پر مواخذہ چلانا چاہتے ہیں، یہ امریکی عوام کی توہین ہے ۔مسٹر ٹرمپ نے مسٹر کیوناگ پر لگنے والے سبھی الزامات کو بناوٹی، من گھڑت اور انہیں بدنام کرنے کی سازش بتایا۔ اگرچہ ڈیموکریٹک قیادت نے مواخذہ چلانے کے اپنے دو ممبر پارلیمنٹ کے مطالبے سے خود کو الگ کرلیا ہے ۔واضح رہے کہ سنیچر کو امریکی سینٹ نے صدر ڈونالڈ ٹمپ کی جانب سے سپریم کورٹ کے جج کے عہدے کیلئے نامزد بریٹ کیو ناگ کی نامزدگی کو 50کے مقابلے 48ووٹوں سے منظوری دے دی۔ اس سے قبل مسٹر کیوناگ کا جج بننے کا راستہ صاف ہوگیا۔ انہوں نے سنیچر کو سپریم کورٹ کے جج کے عہدے کا حلف بھی لے لیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں