جالندھر کے ایک انجینئرنگ کالج میں زیر تعلیم 3کشمیری طلبہ کی گرفتاری ہوسٹل کمرے سے ہتھیار برآمد کرنے کا دعویٰ ، والدین میں فکروتشویش

چندی گڈھ /جالندھر / یواین آئی /پنجاب پولیس اور جموں کشمیر کے خصوصی آپریشن گروپ ﴿ایس اوجی﴾ نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے جالندھر میں واقع ایک تعلیمی ادارے کے ہوسٹل سے کل صبح تین طالب علموں کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے ایک اے کے47رائفل، ایک پستول اور گولہ بارود برآمد کرنے کا دعوی کیا ہے ۔ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل سریش اروڑہ نے ایک بیان میں دعوی کیا کہ گرفتار طلبہ کی شناخت جموں کشمیر کے باشندے زاہد گلزار، محمد ادریس شاہ عرف ندیم، یوسف رفیق بھٹ کے طور پر کی گئی ہے ۔ یہ تینوں جموں و کشمیر میں سرگرم تنظیم، انصار غزوۃ الہند ﴿اے جی ایچ﴾ سے منسلک تھے ۔ تینوں نوجوان جالندھر کے مضافات میں واقع /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
سٹی انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈمینجمنٹ ٹیکنالوجی کے بی ٹیک ﴿سول﴾ کے طالب علم تھے ۔قابل ذکر ہے کہ اس تنظیم سے منسلک ان نوجوانوں کی ہتھیاروں سمیت ایسے وقت گرفتاری ہوئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ کارروائی جموں و کشمیر اور پنجاب میں کام کرنے والے مختلف دہشت گرد تنظیموں اور اس کے اراکین کے بارے میں خفیہ معلومات کی بنیاد پر کی ہے ۔ اس سلسلے میں جالندھر کے صدر تھانے میں تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے اور گرفتار نوجوانوں سے پوچھ گچھ کرکے ان کے نیٹ ورک اور سازش کا پتہ لگانے کے لیے آگے تحقیقات کی جا رہی ہے ۔مسٹر اروڑہ کے مطابق ان نوجوانوں کی گرفتاری اور ان سے ہتھیاروں کی برآمدگي سے اس بات کے صاف اشارے ہیں کہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی نے ملک کے مغربی علاقے میں بھی دہشت گردی پھیلانا شروع کر دیا ہے ۔قابل ذکر ہے کہ پنجاب پولیس نے حال ہی میں پٹیالہ کے بنوڑ سے جموں و کشمیر کے شوپیاں کے غازی احمد ملک نام کے طالب علم کو گرفتار کیا تھا جو چندی گڈھ کے انجینئرنگ کالج میں پڑھ رہا تھا۔ یہ کہا جاتا ہے کہ ملک جے اینڈ پولیس کے ایس پی او عادل بشیر شیخ کا قریبی تھا۔ بشیر حال ہی میں سرینگر میں پی ڈی پی کے ایک رکن اسمبلی کی رہائش گاہ سے سات رائفل لے کر فرار ہو گیا تھا اور اس کے حزب المجاہدین میں شامل ہونے کا اندیشہ ہے ۔ ملک کے بشیر کے ساتھ قریبی تعلقات ہونے پر اسے جموں کشمیر پولیس کو سونپ دیا گیا تھا۔طلبہ کی گرفتاری پر والدین کے علاوہ کشمیری عوام میں فکروتشویش کا اظہار کیاجارہاہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں