انتخابی رپورٹ کارڈ وزیر داخلہ کو پیش ، گورنر کی راج ناتھ سنگھ کیساتھ دہلی میں ملاقات پنچائتی انتخابات کیلئے مزید فورسز کا مطالبہ

نئی دہلی/ ریاستی گورنر ستیہ پال ملک نے کل دلی میںمرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کیساتھ ون ٹو ون میٹنگ کی جس میں ریاست کی سیاسی اور سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اس دوران میونسپل انتخابا ت کے حوالے سے بھی ریاستی گورنر نے مرکزی وزیر داخلہ کو مفصل رپورٹ پیش کی ۔ مرکزی وزیر داخلہ نے گورنر ستیہ پال ملک کو یقین دلایا کہ کشمیر میں میونسپل اور پنچائتی انتخابات کا انعقاد ایک چلینج تھا اور مرکزی حکومت ریاست کی گورنر انتظامیہ کی بھر پور مدد کریگی ، ریاستی گورنر ستیہ پال ملک کی دلی میں سرگرمیاں جاری/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 رہیں اور آج ریاستی گورنر نے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کیساتھ ملاقات کے دوران انہیں ریاست کی سیاسی اور سیکورٹی صورتحال سے آگاہی دلائی جس کے دوران میونسپل انتخابات میں عوامی بائیکاٹ اور مین اسٹریم جماعتوں کی انتخابات سے علیحدگی کے معاملے پر سیر حاصل بحث کی گئی ،ذرائع سے معلوم ہو اہے کہ مرکزی وزیر داخلہ نے ریاستی گورنر کو یقین دلایا کہ ان کو انتظامی امور چلانے میں بھر پور مدد کی جائیگی اور پر امن انتخابات کیلئے جس طرح کی بھی سیکورٹی درکار ہوگی اسے فراہم کی جائیگی ۔ ایک آدھ گھنٹے تک جاری رہنے والی اس میٹنگ میں امن وقانون کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور ایسے میںیہ اس میٹنگ میںدیگر کئی اہم امورات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ہے ، ذرائع کا کہنا ہے کہ مرکزی وزیر داخلہ نے گورنر ستہ پال ملک کے کل کے بیان پر بھی بات کی ہے جس پر دیگر سیاسی جماعتوں نے زبردست رد عمل ظاہر کیا ہے ۔اس معاملے کولیکر کانگریس نے دھمکی بھی دی ہے کہ اگر گورنر موصوف نے اس کی بھر پور وضاحت نہیں کی تو آئندہ کے انتخابات سے متعلق کانگریس اپنے فیصلے پر نظر ثانی کریگی ۔ چنانچہ دلی میں کشمیر انتخابات پر تبادلہ خیال کے دوران مرکزی وزیر داخلہ نے کشمیر کے اندر انتخابی سرگرمیوںپر اطمینان کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ ایسے میں مرکزی حکومت کشمیر کے اندر امن وامان کو یقینی بنانے اور پر امن انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن مدد دینے کیلئے تیار ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر موصوف اور مرکزی وزیر داخلہ کے درمیان ہوئی میٹنگ میں آپریشن آل آوٹ کا معاملہ بھی زیر بحث آیا ہے جس میں گورنر نے اس بات کی سفارش کی ہے کہ انتخابات کے دوران آپریشن آل آوٹ میںکمی لائی جائے تاکہ انتخابی علاقوںمیں کسی بھی طرح سے امن وامان کا مسئلہ پید ا نہ ہو ۔اس دوران گورنر انتظامیہ نے مرکزی وزیر داخلہ کو یہ تجویز پیش کی ہے کہ زیادہ سے زیادہ رقومات فراہم کی جائیں تاکہ رکے پڑے بڑے تعمیراتی پروجیکٹوں کو مقررہ وقت کے اندر مکمل کیا جا سکے ۔اس پر مرکزی وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کے پر امن اختتام کیساتھ ہی رقومات کی واگذار ی کا سلسلہ شروع کر دیا جائیگااور میونسپلٹیوں کے حوالے سے جو بھی رقومات ریاست کے حصے میں آئیں گی ان کویکمشت فراہم کیا جائیگا تاکہ ریاست کے اندر قصبوں کی تعمیر وترقی ہو ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس دوران گورنر موصوف نے پنچائتی انتخابات کو لیکر بھی مرکزی وزیر داخلہ کو تجویز پیش کی ہے کہ پنچائتی انتخابات کیلئے مزید فورسز درکار رہے گی جس پر مرکزی وزیر داخلہ نے گورنر ستیہ پال ملک کو یقین دلایا کہ مرکزی حکومت پر امن پنچائتی انتخابات کیلئے بھی بھر پور تعاون جاری رکھے گی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں