سنگ باز عاشق حسین جنگجو کیسے بنا؟

سرینگر/ کے این ایس/ شمالی کشمیر کے شاٹھ پورہ قلم آباد میں فورسز اور جنگجوئوںکے درمیان جھڑپ میں معروف اسکالر ڈاکٹر منان وانی کے ساتھ ایک اورسرگرم حزب جنگجوعاشق حسین زرگرمارا گیا۔ /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 ایجنسی نے قریبی رشتہ داروں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ عاشق حسین زر گر ولد محمد سلطان زرگر ساکنہ لنگیٹ 26جون 2018کو اچانک لاپتہ ہونے کے بعد جنگجوئوں کے صف میں شامل ہوا ۔قریبی ذرائع نے بتایا اگر چہ اکثر نوجوان لاپتہ ہونے یا جنگجوئوں کے ساتھ شامل ہونے کے بعد اپنی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل کرتے ہیں تاہم عاشق حیسن نے کبھی ایسا نہیں کیا ہے ۔معلوم ہوا کہ عاشق حسین پیشہ سے ٹرک درائیور تھا اور ان کے خلاف پولیس نے سنگ باری کے واقعات کو لے کر ایک کیس سال2016-17میںدرج کیا تھا جس کے بعد عاشق حسین کئی بار گرفتار بھی ہوا ۔ معلوم ہوا ہے کہ اس دوران عاشق حسین گرفتاری سے بچنے کے لیے ایک سال تک روپوش رہا اور کبھی کبھار ہی گھر آتا رہا جس دوران پولیس نے ان کے والد محمد سلطان زرگر کو بھی 8روز تک تھانے میں بند رکھا تاہم عاشق پولیس کے سامنے حاضر ہونے کے بجائے جنگجوئوں کی صف میں شامل ہوا ۔اسی دوران موصوف جمعرات کو ہندوارہ میں شاٹھ گنڈکے مقام پرفورسز کے ساتھ جھڑپ میں جاں بحق ہوا ہ،جس کی نماز جنازہ شام دیر گئے پڑھا ئی گیا جس میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں