میمندر شوپیان - حریت کارکن کوگولیاں مارکر ہلاک کردیاگیا - نماز جنازہ پر عسکریت پسندنمودار، ہوائی فائرنگ کرکے حریت رہنما کو سلامی دی گئی

سرینگر/یو پی آئی/میمندر شوپیاں میں نامعلو م بندوق برداروں نے مسلم لیگ کے ضلع صدر اور حریت کارکن کو گولیوں سے کا نشانہ بنایا،جس کے نتیجے میں اُس کی موقعے پر ہی موت واقع ہوئی ۔ پولیس ذرائع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ ادھر حریت لیڈر کی نماز جنازہ کے دوران عسکریت پسندوں نے سلامی دینے کی غرض سے ہوائی فائرنگ کی۔ میمندر شوپیاں میں اُس وقت اور خو ف ودہشت کا ماحول پھیل گیا جب نامعلوم مسلح افراد نے طاریق احمد گنائی ولد محمد یعقوب ساکنہ میمندر شوپیاں پر اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں وہ خون میں لت پت ہو گیا۔ چنانچہ آس پاس موجود لوگوں نے زخمی شخص کو فوری طورپر نزدیکی اسپتال منتقل کیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔ معلو م ہوا ہے کہ مہلوک شخص کے جسم میں کئی گولیاں پیوست ہوئی تھیں جس کے نتیجے میں اُس کی موقعے /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
پر ہی موت واقع ہوئی ۔ مسلم لیگ کے ضلع صدر کی نعش جونہی اُس کے آبائی گھر پہنچائی گئی تو وہاں کہرا م مچ گیا ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے حریت لیڈر کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور بعد میں اُس کو پُر نم آنکھوں کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا ۔ پولیس ترجمان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق میمندر شوپیاں میں بعد دوپہر عسکریت پسندوں نے ایک شخص پر گولیاں چلائیں جس کے نتیجے میں وہ شدید طورپر زخمی ہوا۔ چنانچہ خون میں لت پت شخص کو علاج ومعالجہ کی خاطر فوری طورپر نزدیکی اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ وہاں زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا ۔ پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔ دریں اثنا نماز جنازہ کے دوران اُس وقت سنسنی کا ماحول پھیل گیا جب عسکریت پسندوں نے حریت لیڈر کو سلامی دینے کی غرض سے ہوائی فائرنگ کی ۔ مقامی ذرائع نے بتایا کہ ایک درجن کے قریب جنگجو میمندر شوپیاں میں نمودار ہوئے اور مسلم لیگ کے ضلع صدر کو سلامی دی جس دوران لوگوں کی کثیر تعداد جنگجوئوں کو دیکھنے کیلئے اُمڑ پڑی تھی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں