سیاست کا مقصداصلاح ہے لیکن موجودہ سیاست میں مذہب وذات پات سے استحصال ہوتا ہے :یشونت سنہا

ممبئی﴿یواین آئی﴾سابق مرکزی وزیر اور بی جے پی کے باغی رہنما یشونت سنہا نے ملک میں صورتحال انتہائی سنگین اور دانشوروں کو اس سمت میں غورکرنا ہوگا کیونکہ سیاست کے ذریعہ مذہب ،زبان اور ذات پات کے نام پر عوام کا استحصال ہورہا ہے ،حالانکہ سیاست کا مقصد معاشرے میں اصلاح کا ہوتا ہے مگر مفاد خود کی ساکھ بچانے کے لیے اس کا استحصال کررہے جوکہ ایک تشویش ناک امر ہے ۔جنوبی ممبئی کے تاریخی نہروسینٹر میں وزڈم فاونڈیشن کے زیراہتمام تنظیم کی روح راوں ڈاکٹر زینت شوکت علی کی کتاب لیگیسی آف انڈیانامی کتاب کے رسم اجرائ کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے ملک میں بڑھتی ہوئی منافرت اور ہجومی تشدد پر گہری تشویش کا اظہارکیا ۔یشونت سنہا کے مطابق ہندوستان میں سیاست دوسروں سے مختلف پائی جاتی ہے ،بیرون ملک اس کو اصلاح کے لیے استعمال یا جاتا ہے ،لیکن یہاں لوگوں میں منافرت اور تفرقہ پیدا کرنے کے لیے ہتھیار کے طورپر استعمال کرنے کی کوشش کی جاتی ہے ۔
انہوں نے نام لیے مودی حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ہم اپنے حق کا بھر استعمال کرتے ہوئے برسراقتدار لوگو ں میں اصلاح کا بغل بجائیں تاکہ ملک کو ترقی وکامرانی کی جانب لے جایا جاسکے کیونکہ ملک میں امن وامان اور قومی ہم آہنگی اور بھائی چارگی کی شدیدضرورت ہے اور اس ضمن میں ہر کسی کوپہل کرنا ہوگی ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں