کربلا میں مظاہرین کی طرف سے کشمیریوں کی حمایت اور انہیں تنہا نہ چھوڑنے کی یقین دہانی قابل تحسین: گیلانی

سرینگر/چیرمین حریت گ سید علی گیلانی نے عراق میں نجف سے کربلا تک ہوئے پُرامن شرکائ واک کشمیر میں بھارت کی افواج کی جانب سے ہورہی قتل وغارت گری اور انسانی حقوق کی بدترین پامالیوں پر ہورہے مظاہرے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مسلم امہ جسدِ واحد کی طرح یکسوئی اور یکجہتی کی علامت ہے اور کہیں بھی کسی بھی خطے میں ہورہی کسی بھی زیادتی پر ان کا ردعمل لازمی ہے۔ انہوں نے مظاہرین کی طرف سے کشمیریوں کی حمایت اور انہیں تنہا نہ چھوڑنے کی یقین دہانی کو قابل تحسین قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ نہ صرف ظلم وستم میں پسی ہوئی قوم کے لیے حوصلہ افزا ہے، بلکہ یہ ہماری تحریک آزادی کی جدوجہد میں ایک نئی روح پیدا کرنے کا باعث بھی بن جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم ملّت کو فرقوں میں بانٹ کر انہیں آپس میں لڑانے کی سازشیں غیروں میں ہی تیار ہوتی ہیں، لیکن انہیں عملانے اور ان کیلئے استعمال ہونے والے اکثر مسلمان ہی ہوتے ہیں۔ انہوں نے زور دیکر یہ بات دہرائی کہ اسلام اتحاد ملّت اور آپسی بھائی چارے کی تلقین کے ساتھ ساتھ فروعی معاملات کو ہوا دینے کی کبھی بھی حوصلہ افزائی نہیں کرتا ہے۔ ہزاروں میل دور ہمارے دینی اور ملی بھائیوں نے ہمارے دُکھ درد کو محسوس کرکے اس پر آواز اٹھائی، ہم اپنے ان بہی خواہوں کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں