وادی میں 250جنگجو سرگرم ،پولیس سربراہ کا انکشاف کہا سنگباری اور مقامی نوجوانوں کی جنگجوئوں تنظیموں میں شرکت میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے

سرینگر/ جے کے این ایس/پولیس چیف کا کہنا ہے کہ وادی کشمیر میں 250جنگجو سرگرم ہے ۔ انہوںنے کہاکہ عسکریت پسندوں کی تعداد میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے۔ پولیس چیف کے مطابق پچھلے دو ماہ کے دوران جنگجوئوں کی صفوں میں مقامی نوجوانوں کی شمولیت کے رجحان میں بھی کمی واقع ہوئی ہے۔ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس کے مطابق وادی کشمیر کے نوجوانوں کو اب یہ احساس ہو گیا ہے کہ تشدد سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں ہے ۔ ایک خصوصی انٹرویو کے دوران پولیس چیف دلباغ سنگھ نے کہاکہ ریاست خاص کروا دی کشمیر میں دن بدن حالات معمول پر آرہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ مقامی نوجوانوں کی جنگجو صفوں میں شمولیت کے رجحان میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے۔ پولیس چیف کا مزید کہنا تھا کہ پچھلے دو ماہ کے دوران مقامی نوجوانوں کی عسکریت پسند صفوں میں شمولیت کا رجحان گڑھ گیا ہے۔ انہوںنے کہاکہ نوجوانوں کو مین اسٹریم کی طرف راغب کرانے کیلئے اقدامات اُٹھائے جار ہے ہیں۔ ریاست میں سرگرم جنگجوئوں کی تعداد کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے کہاکہ کل ملا کر وادی میں 250جنگجو اب بھی سرگرم ہے تاہم سیکورٹی فورسز نے سرگرم جنگجوئوں کے خلاف بڑے پیمانے پر آپریشن شروع کیا ہے جس کے زمینی سطح پر مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں۔ جنگجو مخالف آپریشنز کے دوران خشت باری کے واقعات رونما ہونے کے بارے میں پولیس چیف/جاری صفحہ ۶ پر

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں