پنچایتی انتخابات کے آخری مراحل 8 ویں اور9 ویں مرحلے کیلئے7959 اُمیدوار میدان میں

جموں/پنچائتی انتخابات کے8 ویں مرحلے کے لئے483 سرپنچ حلقوں کے لئے1333 جبکہ 3860 پنچ وارڈوں کے لئے5695 اُمیدوار میدان میں ہیں۔8 ویں مرحلے کے انتخابات8 دسمبر کو منعقد ہوں گے۔چیف الیکٹورل افسر شالین کابرا کے مطابق کپواڑہ میں39 سرپنچ حلقوں کے لئے105 جبکہ321 پنچ وارڈوں کے لئے461 اُمید وار چناؤ میدان میں ہیں۔اسی طرح بانڈی پورہ میں22 سرپنچ حلقوں کے لئے10 اور196 پنچ حلقوں کے لئے64 ، بارہ مولہ میں42 سرپنچ حلقوں کے لئے71 اُمیدوار،366 پنچ وارڈوں کے لئے386 اُمیدوار، سرینگر میں7 پنچ حلقوں /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
کے لئے3 اُمیدوار،59 پنچ وارڈوں کے لئے4 ، بڈگام میں40 سرپنچ حلقوں کے لئے13 اُمیدوار،315 پنچ وارڈوں کے لئے37 اُمیدوار، پلوامہ میں29 سرپنچ حلقوں کے لئے9 اُمیدوار،231 پنچ وارڈوں کے لئے25 اُمیدوار، شوپیاں میں11 سرپنچ حلقوں کے لئے4 اُمیدوار،95 پنچ وارڈوں کے لئے11 ، کولگام میں23 سرپنچ حلقوں کے لئے4 اُمیدوار،177 پنچ وارڈوں کے لئے7 جبکہ جموں کے ریاسی میں55 سرپنچ حلقوں کے لئے205 اُمیدوار،431 پنچ وارڈوں کے لئے894 ، کٹھوعہ میں52 سرپنچ حلقوں کے لئے223 اُمیدوار،384 پنچ وارڈوں کے لئے896 اُمیدوار، سانبہ میں35 سرپنچ حلقوں کے لئے157 اُمیدوار،285 پنچ وارڈوں کے لئے709 ، جموں میں96 سرپنچ حلقوں کے لئے404 اُمیدوار،758 پنچ وارڈوں کے لئے1771 اور راجوری میں32 سرپنچ حلقوں کے لئے125 اُمیدوار اور242 پنچ وارڈوں کے لئے533 اُمیدوار میدان میں ہیں۔انہوں نے کہا کہ پنچائت انتخابات کے سات مرحلے پُر امن ثابت ہوئے اور ووٹروں کی اچھی تعداد نے اپنی حق رائے دہی کا استعمال کیا۔4 دسمبر کو ساتویں مرحلے میں جموں میں84.8 جبکہ کشمیر میں30.3 فیصد ووٹنگ درج کی گئی اور مجموعی شرح75.3 فیصد درج کی گئی۔چھٹے مرحلے میں مجموعی شرح76.9 ، پانچویں مرحلے میں مجموعی شرح71.1 ،چوتھے مرحلے میں مجموعی شرح71.3 ، تیسرے مرحلے میں مجموعی شرح70.2 ، دوسرے مرحلے میں مجموعی شرح71.1 جبکہ پہلے مرحلے میں ووٹنگ کی مجموعی شرح80.4 فیصد درج کی گئی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں